27 January 2011 - 15:03
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2342
فونت
رسا نيوزايجنسي – مجلس وحدت مسلمين پاکستان نے کربلائے معلي کے بم دھماکے خلاف احتجاجي جلوس نکالا اور اسے امريکا اوراسرائيل کي سازش کا نتيجہ بيان کيا ?
مجلس وحدت مسلمين پاکستان


رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، مجلس وحدت مسلمين پاکستان کے زير انتظام نکالے گئے احتجاجي جلوس ميں شريک سينکڑوں افراد زائرين حسين پر ہونے والي دہشت گردانہ کاروائي کي مذمت پر مبني بينرز اور يا حسين کے سرخ پرچم اٹھائے ہوئے تھے ?

مرزا يوسف حسين نے اس احتجاج ميں کربلائے معلي ميں زائرين امام حسين عليہ السلام پر ہونے والے بم دھماکوں ميں عالمي استعمار امريکا اور اس کي ناجائز اولاد اسرائيل کا ہاتھ بتاتے ہوئے کہا : سامراجي دنيا ان بم دھما کوں کے ذريعہ امت مسلمہ ميں انتشار پيدا کر کے اپنے ناپاک عزائم کو عراق ميں نافذ کرنا چاہتي ہے ?

مجلس وحدت مسلمين کراچي پاکستان  کے رکن مرزا يوسف حسين نے مزيد کہا : ھم دين مبين اسلام کي بقاء کي خاطر سيد الشہداء امام حسين عليہ السلام کي سنت پر عمل پيرا ہوتے ہوئے اپني جانيں نچھاور کرتے رہيں گے ?

انہوں نے کہا : سن 60 ميں بھي وقت ظالم وجابر بادشاہ نے اپني بربريت کا دبدہ قائم کرنے کي غرض سے مظلوم ، بے گناہوں کے خون سے ہولي کھيلي تھي اور اج بھي وقت کي سامراجي طاقتيں اپنے مفاد کے لئے مظلوموں کے خون سے ہولي کھيل رہي ہيں مگر کل بھي خون کي طاقت سے حق کا پيغام عام کيا گيا تھا اوراج بھي کيا جائے گا ?

قابل ذکر ہے کہ اس احتجاجي جلوس ميں شريک افراد نے لبيک يا حسين ، امريکا اور اسرائيل مردہ باد جيسے نعرے لگائے اورامريکہ و اسرائيل کا پرچم نذر آتش کيا ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬