23 February 2011 - 23:10
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2441
فونت
آيت الله مکارم شيرازي :
رسا نيوز ايجنسي ـ حضرت آيت‌الله مکارم شيرازي نے وضاحت کي : علاقہ کي حالات کي طرف غور کرنے اور دنيا ميں ہو رہي تبديلياں کو مد نظر رکھتے ہوئے ملک کے اندر پہلے سے زيادہ اتحاد کي ضرورت ہے کيونکہ اس وقت دنيا کے مسلمان اسلامي ايران کي طرف نگاہ کر رکھي ہے ?
آيت الله مکارم شيرازي

رسا نيوز ايجنسي کے رپورٹر کے رپورٹ کے مطابق حضرت آيت ‌الله ناصر مکارم شيرازي مرجع تقليد نے ا?ج صبح اپنے فقہ کے درس خارج ميں جو ايران قم کے مسجد اعظم ميں سيکڑوں طلاب و علماء کے شرکت کے ساتھ منعقد ہوا انہوں نے سخن چيني کي ايک روايت کي طرف اشارہ کرتے ہوئے اظہار کيا : سخن چيني ان مسائل ميں سے ہے کہ اسلام ميں اس سے دوري و پرھيز کي بہت تاکيد کي ہے ?

انہوں نے عيب گويي و سخن چيني کو اسلام ميں بہت برا فعل کہا گيا ہے بيان کيا : وہ چيزيں جو بد بيني اور اختلاف کا سبب ہوتي ہے اسلام ميں اس کي مذمت کي گئي ہے اور سخن چيني و عيب گويي بھي انہي ميں سے ہے ?

حضرت آيت‌الله مکارم شيرازي نے وضاحت کي : اگر ھم لوگ اتحاد و اتفاق کے حصول ميں کوشاں ہيں تو ھم لوگوں کو چايئے کہ عيب گويي، سخن چيني، تهمت و بدگويي، کندروي و تندروي جيسے مسائل سے پرھيز کريں اور واقعي و حقيقي وحدت کو حاصل کريں ?

انہوں نے تاکيد کي : اگر وہ چيزيں جس کي اسلام نے ھم لوگوں کو حکم ديا ہے اس پر عمل کريں تو مجھے يقين ہے کہ خداوند عالم بھي ھم لوگوں کي مدد کريگا اور ھم لوگ زيادہ سے زيادہ متحد و منسجم رہينگے ?

مرجع تقليد نے کہا : اس وقت دنيا کے مسلمانوں کے سلسلہ ميں ميں زيادہ فکر مند ہو گيا ہوں خاص کر ليبي کے حالات ايک خاص وضعيت اختيار کر چکي ہے کہ پہلے کہا جاتا تھا کہ اس ملک کے سربراہ پاگل ہے ، ا?ج وہ قول صادق ہو رہا ہے اور وہاں بغير رحم کےعوام کو قتل کيا جا رہا ہے ?

انہوں نے وضاحت کي : اميد کرتا ہوں کہ خدا وند عالم ليبي کے عوام کو اس غير عاقل کے شر سے نجات دے اور اسلامي ممالک کي عوام اپنے مقصد کو حاصل کر ليں ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬