27 February 2011 - 16:58
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2449
فونت
بحرين گورمنٹ کے پيچھے ہٹتے ہوئے قدم :
رسا نيوزايجنسي - جمہوريت اور تحريک آزادي بحرين کے جنرل سيکرٹري شيخ حسن مشيمع گذشتہ روز بحرين کے دارالحکومت منامه پہونچے ?
شيخ حسن مشيمع

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، جمہوريت اور تحريک آزادي بحرين کے جنرل سيکرٹري اورشيعہ ليڈر، شيخ حسن مشيمع جن کا پاسپورٹ بحرين گورمنٹ کے حکم مطابق باطل کرديا گيا تھا بادشاہ بحرين کے حکم کے مطابق ان کا پاسپورٹ انہيں دوبارہ واپس کرديا گيا اور وہ بحرين واپس لوٹ ائے ?

انہوں نے بحرين واپس لوٹنے سے پہلے لبنان ميڈيا سے گفتگو ميں کہا : اٹھ سال ملک سے دوري اور بحريني عوام کے شعلہ ور ہونے کے بعد ملک واپسي نصيب ہورہي ہے تا کہ انقلاب ميں شريک ہوسکوں اور اس ملک کي سياسي تبديليوں ميں شريک رہوں ?

شيخ مشيمع نے بحرين کو داخلي اورقبيلہ اي جنگ سے روبرو ہونے کا انکار کرتے ہوئے کہا : ميرے لحاظ سے بحرين ميں شيعہ اور سني اختلافات موجود نہي ہے ، ہاں بحرين گورمنٹ کي کوشش ہے کہ اس اختلاف کو پھيلاکر انقلاب کا رخ موڑ دے مگر ھم ھميشہ کي طرح اج بھي شيعہ وسني اتحاد کي تاکيد اورمذھبي اختلافات کي مذمت کرتے ہيں ?

تحريک آزادي بحرين کے جنرل سيکرٹري نے عرب ممالک کے موجودہ نظام کو تبديل ہوتا بيان کيا اور کہا : عصر تغيير واصلاح تيونس سے اغاز ہوا اورمصروليبي تک پہونچا اور اميد ہے کہ علاقے کے دوسر ے مملک تک بھي بہت جلد پہونچے گا اوراسي بنياد پر ھم علاقے ميں امريکا کے حاکم کي موجودگي کے شاھد ہيں تاکہ اس انقلاب پر روک لگا سکيں ?


تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬