01 March 2011 - 14:17
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2455
فونت
مجلس وحدت مسلمين پاکستان:
رسا نيوزايجنسي - مجلس وحدت مسلمين پاکستان کے رھنماوں نے ''دفاع مسلمين ريلي'' ميں عرب ممالک کي تحريک بيداري کوامريکي سامراجيت کا خاتمہ بيان کيا ?
دفاع مسلمين ريلي

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، مجلس وحدت مسلمين کراچي پاکستان کے زير اہتمام مصر،تيونس،بحرين،ليبيا اور يمن سميت عالم اسلام ميں رخ دينے والي عوامي بيداري کي تحريکوں سے اظہار يکجہتي اور امريکي و صہيوني نواز غاصب حکمرانوں کے غاصبانہ تسلط کے خاتمے کے لئے ''دفاع مسلمين ريلي'' نکالي گئي?

اس رپورٹ کے مطابق اس احتجاجي جلوس ميں مجلس وحدت مسلمين پاکستان کے مرکزي جنرل سيکريٹري حجت السلام ناصر عباس جعفري ،جماعت اسلامي کراچي کے نائب سربراہ نصر اللہ شجيع،جمعيت علمائے پاکستان کے رہنما علامہ قاضي احمد نوراني صديقي اور علامہ آفتاب حيدر جعفري ، مولانا مرزا يوسف حسين ، مولانا صادق رضا تقوي اور مولانا علي مرتضي زيدي ، مولانا حيدر عباس ، مولانا محمد علي الحسيني، شبر رضا،و ديگر نے شرکت وتقريريں کيا?

اس ريلي کا آغاز مين نمائش چورنگي سے سينکڑوں خواتين اور بچوں کي شرکت ميں مجلس وحدت مسلمين کے مرکزي جنرل سيکريٹري حجت السلام راجہ ناصر عباس جعفري کي قيادت ميں ہواشرکائے ريلي نے ہاتھوں ميں بينرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر غاصب حکمرانوں کي برطرفي اور اسرائيلي ايجنٹ قذافي کو سزائے موت دينے کا مطالبہ درج تھا اورساتھ ہي عالمي استعمار امريکا اور اسرائيل سے نفرت پر مبني نعرے بھي درج تھے?

مجلس وحدت مسلمين پاکستان کے مرکزي جنرل سيکريٹري اور معروف عالم دين حجت السلام راجہ ناصر عباس جعفري نے بيان کرتے ہوئے کہ تيونس سے شروع ہونے والي عوامي بيداري کي تحريک اب مشرق وسطي? اور افريقائي ممالک سميت دنيا کے گوش و کنار ميں پھيل رہي ہے کہا : دشمنان اسلام اوربعض متعصب اسلامي ممالک نے جس انقلاب اسلامي کو 1979ء ميں دبانے کي جو سازش کي تھي وہ عملي طور پر ناکام ہوئي ہے اور انقلاب اسلامي ايران سرحدوں تک محدود نہيں رہا بلکہ اب دنيا کے گوش و کنار ميں نمو دار ہو رہا ہے?

انہوں نے تيونس کےعوامي انقلاب يا مصر ميں امريکي ايجنٹ ، غاصب نا مبار ک کے غاصبانہ تسلط کا خاتمہ، ليبيا ميں صہيوني ايجنٹ قذافي کے خلاف عوامي تحريک يا بحرين ميں حماد بن عيسي? جيسے امريکي نمک خوار کے خلاف عوام کے قيام کوانقلاب اسلامي ايران کي تحريک کا نتيجہ بتاتے ہوئے کہا : ايران تنھا وہ ملک ہے جس نے عوام وملت کے دل و دماغ سے امريکي غاصبانہ تسلط کے خلاف قيام کي راہ ہموار کي ہے اور اب انقلاب کي يہي باز گشت يونان اور يورپي ممالک ميں بھي سنائي دے رہي ہے ?

انہوں نے مزيد کہا : حزب اللہ لبنان کي کامياب مقاومت ہو يا حماس کي عظيم جد وجہد ، آج امت اسلاميہ حقيقي اسلامي نظام کي طرف بڑھ رہي ہے اور امريکا کي جانب سے صہيوني تحفظ کے لئے بنائي گئي خود ساختہ ديوار کو نابود کرنے کي طرف گامز ن ہے اس وقت دنيا بھر کے مسلمان آزادي کي جانب گامزن ہو چکے ہيں بيداري ان کا مقدر اور اسلامي نظام دنيا کا مقدر بن چکا ہے?
 
معروف عالم دين حجت السلام راجہ ناصر عباس جعفري نے تين پاکستاني شہريوں کے قتل کي بنياد پرامريکي جاسوس ريمنڈ ڈيوس پر چلائے جانے والا عدالتي مقدمہ کو پاکستاني عوام کے جذبات کي ترجماني بتاتے ہوئے کہا : ھم مملک کو امريکي سي آئي اے کي آماجگاہ نہي بننے ديں گے ، اس ملک کو بنانے کے لئے لاکھوں جانوں کا نذرانہ پيش کياگيا تھا تاہم اس کي بقاء کي خاطر بھي لاکھوں جانوں کا نذرانہ دينے کے لئے تيار ہيں ?

انہوں نے حکومت پاکستان سے ملک بھر ميں موجود امريکي دہشت گرد سي آئي اے اور بليک واٹر سے متعلقہ تمام امريکي جاسوس دہشت گردوں کو گرفتار کئے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا : پاکستاني قوم حکومت اور افواج پاکستان کے شانہ بشانہ ہے اور حکومت کو يقين دلاتي ہيں کہ اگر حکومت پاکستان نے امريکا کے خلاف جرات مندانہ اقدام کئے تو قوم حکومت کو تنہا نہيں چھوڑے گي  ?

انہوں نے صہيوني ايجنٹ قذافي کو پھانسي کا مطالبہ کرتے ہوئے امريکا کو مزيد خبر دار کيا : امريکا ليبيا کے وسائل پر غاصب ہونے کي کوشش نہ کرے ?

جماعت اسلامي کراچي کے نائب سربراہ نصر اللہ شجيع اور جمعيت علمائے پاکستان کے رہنما قاضي نوراني  و ديگران نے خطاب کرتے ہوئے کہا : دنيا ميں پيدا ہونےو الي اسلامي بيداري کي تحريکيں امريکي گماشتوں سے نفرت کا اظہار اور ثبوت ہيں کہ دنيا بھر کي عوام امريکي و صہيوني آلہ کاروں اور امريکيوں سے سخت نفرت کرتي ہيں ?

انہوں نے بحرين، يمن، ليبيا، سميت ديگر ممالک ميں جاري عوامي تحريکوں کو امريکا کي جانب سے ہائي جيک کئے جانے پر شديد غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا : آج امريکا ناکامي سے دوچار ہو چکاہے اسي لئے شرافت کا لبادہ اوڑھ کر مظاہرين کو راہ راست سے منحرف اور مسلم ممالک کے وسائل پر قابض ہو نا چاہتا ہے جسے کسي بھي صورت قبول نہيں کيا جائے گا ?

قابل ذکرہے کہ اس موقع پر شرکائے ريلي نے امريکا اور غاصب صہيوني رياست اسرائيل کے خلاف زبر دست نعرے بازي کي اور بحرين، يمن، ليبيا، تيونس اور مصر سميت دنيا بھر ميں اٹھنے والي عوامي بيداري کي انقلابي تحريکوں کي حمايت ميں پر جوش نعرے بلند کئے اور امريکي و صہيوني پرچم بھي نذر آتش کئے گئے?

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬