06 March 2011 - 17:37
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2487
فونت
حجت السلام مھدي مھدوي پور :
رسا نيوزايجنسي – حجت السلام مھدي مھدوي پور نے المصطفي انٹر نيشل يونيورسٹي کے ايران کے زير اھتمام بين الاقومي سمينارميں مذاھب کي تعليمات کو تفريق سے ازاد بيان کيا ?
بين الاقومي سمينار

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، اج اسلام اور ھندوستاني مذاھب ميں اخلاقي اقدار کے موضوع پر المصطفي انٹر نيشل يونيورسٹي ايران کي جانب سے انڈين اسلامک کلچرميں بين الاقومي سمينارکاانعقاد کيا گيا ?

اس بين الاقومي سمينار کے افتتاحي اجلاس کي صدارت رھبر معظم انقلاب اسلامي ايران کے نمائندے حجت السلام والمسلمين مھدي مھدوي پور نے کي?

انہوں نے اپنے صدارتي خطبے ميں يہ بيان کرتے ہوئے کہ ھر مذھب کي تعليمات محبت ، بھائي چارگي اور امن کي باتوں سے عبارت ہيں کہا : کسي مذھب نے بھي پھوٹ ڈالنے اور تفريق پيدا کرنے کي بات نہي کي اوراجازت نہي دي ?

انہوں نے يہ کہتے ہوئے کہ انسانوں کي بھلائي اسي ميں ہے کہ وہ اس امن کے پيغام کو اپني زندگي ميں شامل کرے تاکيد کي : تمام مذاھب کي تعليمات ميں اخلاقيات کي اھم رول ہے اور تمام اديان ومذاھب ايک ايسي زندگي گزارنے کي تاکيد کرتے ہيں جس ميں اخلاقي اقدار کو مثبت انداز ميں مکمل طور پر شامل کيا گيا ہو ?

انہوں نے اس سمينار کا مقصد مذاھب کے مابين مشترکہ اخلاقي اقدار کو سامنے لانا اور اس بات کو واضح کرنا بتايا اور کہا: تمام مذاھب کي تعليمات نے ميل جول ، بھائي چارہ اوراخوت کو فروغ دينے پر زور ديا ہے ?

اس سمينار کے ايک دوسرے مقرراکال تخت صاحب کے گربچن سنگھ جتھيدار نے کہا : سکھ مذھب اور مذھب اسلام کي اخلاقي تعليمات ميں بہت کچھ مشترک ہے ?

ايران کے سفير مھدي نبي زادہ نے اپني تقرير ميں کہا : ھندوستان ميں جتنے مذاھب پائے جاتے ہيں ان سب کي تعليم مثبت اخلاقي رويوں کا فروغ اور پر امن بقائے باھم پر مبني ہے ?

مولانا کلب جواد نے حضور سرور کائنات کے اخلاق حسنہ کو تمام کائنات عالم کے لئے نمونہ عمل بتاتے ہوئے کہا : اپ کي مکي اور مدني دونوں زندگيوں کو بغورمطالعہ سے ديکھا جاسکتا ہے کہ اگر ھم ايک غير اسلامي معاشرے ميں زندگي بسر کريں تو کس طرح دوسرے مذاھب کے معتقديں کے ساتھ پيش ائيں ?

قابل ذکر ہے کہ اس کانفرنس ميں مختلف مذاھب کي علمي ، ثقافتي شخصيتوں نے شرکت فرمائي?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬