11 September 2009 - 15:41
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 257
فونت
لکھنو:
رسا نيوز ايجنسي - محبان علي(ع)نے شہادت اميرالمومنين کے موقع پر ايک تعزيتي جلسہ ميں اپ کي عظيم روحاني شخصيت اور انکے اوصاف جميلہ اور عدل و انصاف پر مبني نظام پر بھرپور روشني ڈالي.

رسا نيوز ايجنسي کے لکھنئو سے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق ، محبان علي(ع) کے زير اہتمام شہادت اميرالمومنين حضرت علي عليہ السلام کے موقع پر ايک تعزيتي جلسہ منعقد ہوا?جلسہ کو خطاب کرتے ہوئے مقررين نے جانشين پيغمر اسلام حضرت علي عليہ السلام کي عظيم روحاني شخصيت اور انکے اوصاف جميلہ اور عدل و انصاف پر مبني نظام پر بھرپور روشني ڈالي.

دنيا سے بے رغبتي ، جاہ و حشم سے دوري و يہوديوں باغ ميں مزدوري، غرباءپروري، جذبہءجہاد، شجاعت اور صبر و استقلال جو مثالي نمونے آپ نے پيش فرمائے وہ ہم سب کے لئے مشعل راہ ہيں، ليکن افسوس کہ ھم انکي سيرت حسنہ کو بھول بيٹھے? اور دنياکو حاصل کرنے ميں مشغول ہيں?

حضرت نے کبھي حکام کي چاپلوسي اور ارباب اقتدار کي خوش آمد نہ کي ? حضرت قنبر جيسے غلام اور جناب فضہ جيسي کنيز کے ساتھ مساوي سلوک کرتے تھے
 ?جناب امير فرماتے تھے کہ اس سے پہلے کہ ميں دنيا سے رخصت ہوجاوں ، مجھ سے جو کچھ پوچھنا ہے دريافت کر لو? مگر افسوس کہ دور حاضر ميں انکي نيابت کے کچھ دعوے داران علم سے دور اور اسلام کي بنيادي معلومات سے بھي نا آشنا ہيں? محبت علي(ع)  کے جو دعوے کئے جا رہے ہيں ? وہ قطعي کھوکھلے ہيں

حضرت علي کبھي باطل طاقتوں کے سامنے نہيں جھکے اور نہ ہي حکام کي جي حضوري کي

مقررين نے نوجوانان ملت سے اپيل کي کہ وہ قرآن فہمي کا جذبہ پيدا کريں اور صاحب ذوالفقار، حيدر کرار کي پيروي کرتے ہوئے حقوق غصب کرنے والوں کے خلاف جد و جہد کريں اور خود ساختہ قائدين ملت کي شاطرانہ چالوں سے ہوشيار رہيں اور قوم کو استعمال نہ ہونے ديں?آج ضرورت اس بات کي ہے کہ اميرالمومنين حضرت علي عليہ السلام کے احکامات و سيرت کے مطابق عمل کيا جائے?

شخصيتوں کو حق کي کسوٹي پر پرکھا جائے? اورمفاد پرست قائدين اور انکے ارد گرد رہنے والے خوشامد افراد جنہوں نے قوم و ملت کے لئے کبھي کچھ نہيں کيا اورتمام     بيدين،بدکار،فريبي،ڈھونگي،بدچلن،مطلبي ،شاطر،بداخلاق،بيہودہ،ظالم،سرکش،زرپرست،حاسداور وقف خورافراد سے بھي کھل کر اپني بے زاري کا اظہار کريںتاکہ اميرالموئمنين کي تعليمات پر عمل کيا جا سکے?
مقررين نے کہا کہ محبت علي کا تقاضہ ہے کہ ?غريبوں،محتاجوں،بيواوں،يتيموں،بے سہاراوکمزور افرادکي مکمل حمايت کي جائے اور ايسے افراد پر طاقت آزمائي اور سرکشي کرنے والوں نيز امت مسلمہ ميں انتشار و افتراق پھيلانے والے استعماري، صہيوني، فسطائي اور طاغوتي طاقتوں کے ايجنٹوں سے بھي ہوشيار رہيں?

اس جلسہ کےمقررہ صدر نے اپني صدارتي تقرير ميں قوم کو حالات حاضرہ سے با خبر کرتے ہوئے کہا کہ قوم اب کسي بھي شخصيت کي ’ بندھوا مزدور‘ نہيں رہي ہے?بحمد اللہ قوم ميں حق و باطل کو پرکھنے کا شعور پيدا ہو تا جا رہا ہے?مومن کو ايک سوراخ سے بار بار نہيں ڈسا جا سکتا، لہ?ذا وہ افراد جو اپني ذاتي خواہشات کي تکميل کے لئے مسلسل قوم کا استحصال کرتے ہيں انکو اب کسي بھي حال ميں پنپنے نہيں ديا جائےگا?

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬