25 March 2011 - 15:27
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2573
فونت
پاکستان کے دارالحکومت لاہورميں :
رسا نيوزايجنسي - عالم اسلام کي انقلابي تحريکوں کے حامي ايک ہزار سے زائد شيعہ علماء کا پاکستان کے دارالحکومت لاہورميں اجلاس منعقد ہوا ?

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، جامع? المنتظر لاہور ميں پورے پاکستان سے ايک ہزار سے زائد علماء و دانشور حضرات کا مشترکہ اجلاس منعقد ہوا جس ميں عالم اسلام ميں چلنے والي انقلابي اور عوامي تحريکوں سے حمايت کا اعلان کيا گيا ?

اس رپورٹ کے مطابق ، اس اجلاس ميں پاکستان کے معروف علمائے کرام ميں سے تحريک جعفريہ پاکستان کے سربراہ ، حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي، مجلس وحدت مسلمين پاکستان کے سربراہ حجج الاسلام ناصر عباس جعفري،شيخ محسن نجفي،قاضي نياز،حافظ رياض حسين،شيخ شفائ،ملک اعجاز سميت ديگرعلماء موجود تھے?

مقتدر علمائے کرام نے اجلاس ميں دنيائے اسلام کي عوامي تحريکوں سے حمايت کا اعلان کرتے ہوئے کہا : دنيا بھر ميں جاري انقلابي اسلامي بيداري کي تحريکوں ميں عوام نے اپنے امريکي نواز حکمرانوں کے خلاف صدائے حق بلند کر رکھا ہے اور استبدادي قوتوں سے نجات کي کاوشوں ميں مصروف عمل ہيں ?

انہوں نے مزيد کہا : دشمن اسلام و ملت اسلاميہ اس عوامي بيداري کو تفرقہ پرستي کا رنگ دينے ميں مصروف عمل ہيں ?

علمائے کرام نے بحرين ميں سعودي افواج سميت ديگر غير ملکي افواج کي مداخلت اور پر امن مظاہرين پر تشدد غير انساني افعال کي شديد مذمت کرتے ہوئے سعودي عرب کے حکام سے مطالبہ کيا : بحرين سے فوري طور پر سعودي افواج کا انخلاء کرے?

انہوں نے سعودي جارح افواج کي جانب سے بحرين ميں ڈھائے جانے والي مظالم کي شديد مذمت کرتےہوئے کہا : جارح سعودي افواج کے ہاتھوں بحرين ميں موجود صحابي رسول کے مزار اقدس کي بے حرمتي ناقابل بخشش ہے ?

علماء کرام نے اس بات کي جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ دنيائے اسلام ميں چلنے والي بيداري کي تحريکيں کسي ايک مکتبہ فکر کے زير اثر نہيں کہا : ان تحريکوں کومذھبي تفرقہ انگيزي کا رنگ دينے کي کوشش کرنا درا صل اسلام کے حق ميں خيانت کا مرتکب ہو نا ہے?

اس اجلاس کے اخر ميں تمام علمائے کرام نے مشترکہ طور پر اس عزم کا اظہار کيا کہ پاکستان ميں ان اسلامي تحريکوں کي حمايت جاري رکھيں گے?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬