04 May 2011 - 14:48
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2735
فونت
آيت الله صافي گلپايگاني نے متنبہ کيا :
رسا نيوز ايجنسي ـ حضرت آيت الله صافي گلپايگاني نے نا محرم مرد اور عورت کے درميان اختلاط پر اظہار افسوس کرتے ہوئے بيان کيا : حضرت فاطم? الزھرا سلام اللہ عليھا خدا وند عالم کے حکم پر عمل کرنے کي کامل نمونہ ہيں اور ان کا فرمان ھميشہ لوگوں کے لئے بيان کيا جائے کہ « خواتين کے لئے بھترين حالت وہ ہے کہ نا محرم مرد اس کو نہ ديکھے اور وہ بھي نا محرم مرد کو ديکھے » ?
آيت الله صافي گلپايگاني

رسا نيوز ايجنسي کے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق حضرت آيت الله لطف الله صافي گلپايگاني نے اپنے فقہ کے درس خارج کے ابتدا ميں حضرت فاطم? الزھرا سلام اللہ عليھا کے ايام شھادت کي مناسبت سے کہا : اس ايام ميں شيعوں کي ذمہ داري يہ ہے کہ حضرت فاطم? الزھرا سلام اللہ عليھا کي واقعي معرفت حاصل کريں ?

انہوں نے حضرت صديقہ طاهره حضرت فاطم? الزھرا سلام اللہ عليھا کو انسانيت کے لئے کامل نمونہ عمل جانا اور وضاحت کي : اگر ھم لوگ چاہتے ہيں کہ دنيا والوں کو زندگي بسر کرنے کے لئے ايک بھترين نمونہ پيش کريں تو دنيا کے سامنے حضرت فاطم? (س) کي رفتاري سيرت کو بيان کريں اور حضرت فاطم? الزھرا (س) صرف دنيا کي خواتين ہي کے لئے نمونہ عمل نہي ہيں بلکہ حضرت دنيا کے تمام انسانيت کے لئے نمونہ ہيں ?

حضرت آيت الله صافي گلپايگاني نے حضرت زھرا (س) کي کچھ رفتاري ، اخلاقي و معنوي خصوصيات کو بيان کرنے کے ساتھ اظہار کيا : ان کي زندگي ميں زھد و تقوي اور قناعت دنيا کے تمام لوگوں کے لئے سبق حاصل کرنے کے لئے ہے اگر کوئي خانوادہ ان کے زھد و قناعت پر عمل کرے تو ان کي زيادہ تر مشکلات ختم ہو جائے گي ?

حوزہ علميہ قم ميں درس خارج کے استاد نے ان کي ايثار و قرباني اور دنيا کي رنگيني و چمک سے دوري کي طرف اشارہ کرتے ہوئے وضاحت کي : حضرت فاطم? الزھرا سلام اللہ عليھا نے فريب دينے والے تمام پہلوؤں کو اپنے سے الگ رکھا اور صرف سالم زندگي اور احکام اسلامي و اخلاق و معنويت کي سعادت ميں مشغول تھيں ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬