12 May 2011 - 19:03
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2764
فونت
علماء اسلام کونسل بحرين کے رکن :
رسا نيوزايجنسي - شيخ البحراني نے کہا : ال خليفہ کا سقوط اور بحرين کے شيعوں کي پيروزي بلا شک وشبہ عربستان کے شيعوں ميں بيداري کي لہر پيدا کرے گا ?
بحرين


رسا نيوزايجنسي کے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق ، علماء اسلام کونسل بحرين کے رکن ، شيخ حسن البحراني جنھوں نے بيداري اسلامي کانفرنس ميں شرکت کي غرض سے شھر تبريز ايران کا سفر کيا تھا اج صحافيوں سے ملاقات ميں بيان کيا : ال خليفہ کے خلاف ھر دس سال ميں ايک بارايک انقلاب بحرين ميں اتا ہے اور اس بار کا يہ قيام گذشتہ سے قياموں کہيں وسيع پيمانے پر ہے ?

انہوں نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ ال سعود ال خليفہ کي جنايتوں کے دوش بہ دوش ہے کہا : اس کے باوجود کہ بحرين کي اکثريت شيعہ ہے مگر اس ملک کے فوجي اکثر عربستان اور پاکستان کے افراد ہيں جنہيں بحرين کي نيشنيلٹي دے دي گئي ہے ?

حسن البحراني نے مسجدوں اور قران کريم کے اگ لگائے جانے پر شديد اعتراض کرتے ہوئے ياد دہاني کي : يہ بے شرمانہ اقدمات سقوط ال خليفہ کے سبب بنيں گے اور ال خليفہ کا سقوط اور بحرين کے شيعوں کي پيروزي بلا شک وشبہ عربستان کے شيعوں ميں بيداري کي لہر پيدا کرے گا ?

انہوں نے بحرين کے داخلي مسائل کي جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا : ميڈيا ،عوام اور بحرين کے شيعہ ازادي سے محروم ہيں ال خليفہ کے خلاف ھر طرح کا اعتراض جيل اور موت کا ضامن ہوتا ہے ?

حوزہ علميہ کے اس تعليم يافتہ نے بحريني عوام اور شيعوں کے خلاف خليجي ممالک کے بيانيہ کي جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا : عربي حکام علاقے کي مسلم ابادي کے سلسلے ميں متفکر ہونے کے بجائے اپني قدرت ومسند کے کے سلسلے ميں پريشان ہيں اور اسي بنياد پر علاقہ کي عوامي بيداري سے مقابلہ کرنے ميں ھر ممکنہ کوشش ميں مشغول ہيں ?

انہوں نے دنيا کے مسلمانوں کي اسلامي تحريک کا ائيڈيل انقلاب اسلامي کو قرار ديتے ہوئے کہا : يقينا مستقبل قريب ميں موجودہ حالات پر ملتوں کے ارادے حاکم ہوں گے ، اج کي اھم ترين ضرورت اتحاد ويکجہتي اور سامراجيت سے مقابلہ ہے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬