25 May 2011 - 01:01
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2815
فونت
حجت الاسلام سيد احمد علي عابدي :
رسا نيوزايجنسي – مدرسہ اميرالمومنين کے پرنسپل حجت الاسلام سيد احمد علي عابدي نے فاطمہ زھراء سلام اللہ عليھا کو حجت خدا کي حجت جانا ?
سختياں گھرانے کے تزلزل کا سبب نہ بنيں / حجت خدا پہ فاطمہ حجت ہيں

شھر بمبي ھندوستان کے امام جمعہ نے رسا نيوزايجنسي کے رپورٹر سے گفتگو ميں فاطمہ زھراء سلام اللہ کي شخصيت کو ايک افاقي شخصيت بيان کيا ?

انہوں نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ پيغمبر اسلام صلي اللہ عليہ والہ وسلم ساري دنيا کے لئے رحمت کا پيغام ليکر ائے کہا : مرسل اعظم (ص) نے فاطمہ (ع) کو اپنے حق ميں رحمت جانا ?

حجت الاسلام سيد احمد علي عابدي نے يہ کہتے ہوئے کہ پيغمبر کي ذات گرامي وہ ہے جس کے قلب پہ قران جيسي ھدايت کي کتاب نازل ہوئي تاکيد کي : فاطمہ (س ) کي ذات گرامي کو پيغمبر اسلام (ص) نے اپنے دوپہلوں کے درميان موجود روح قرار ديا ?

ھندوستان کي اس معروف شخصيت نے فاطمہ زھراء کو مرکز نزول قران بتاتے ہوئےکہا : اپ ايک ايسي شخصيت ہيں جسے قران نے ايت تطھير اورايت مباھلہ ميں نقطہ مرکزي قرار ديا ?

انہوں نے روايات کے ائينے ميں يہ بيان کرتے ہوئے کہ معصومين علھيم السلام نے بارہا اپ کے حق ميں فرمايا کہ ھم دنيا پہ حجت ہيں اور فاطمہ (س ) ھم پر حجت قرار دي گئي ہيں کہا : وہ شخصيت جو معصوم ذوات کے لئے اسوہ قرار پائے گناہ گاروں کيلئے کيسے اسوہ نہوگي ?

شھر بمبي ھندوستان کے امام جمعہ نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ اج کا معاشرہ اپ کي سيرت پر عمل کرکے ايک اچھا معاشرہ بن سکتا ہے کہا : ھم موجودہ معاشرے ميں بخوبي شاھد ہيں کہ گھرانوں نے دنيا کي رنگينوں ميں خود کو گم کرکے خود کو مشکلات سے روبرو کررکھا ہے ?

حجت الاسلام سيد احمد علي عابدي نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ جناب زھراء سلام اللہ عليھا نے اپني حيات ميں تمام مشکلات کے باوجود ھرگز اپنے شوھر سے فرمائش نہي کي کہا : بارہا فاقے اور سختيوں سے روبرو دامن حيات نے ايک بار بھي لب شکوہ نہي کھولا ?

انہوں نے مزيد کہا : اگر اپ کي سير ت کو جامہ عمل پہنايا جائے تو موجودہ حالات ميں ٹوٹتے اور بکھرتے گھرانوں کو بچايا جا سکتا ہے اوراختلاف کا خاتمہ کيا جاسکتا ہے ?

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬