25 May 2011 - 15:45
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2817
فونت
آيت الله جوادي آملي :
رسا نيوز ايجنسي ـ حضرت آيت الله جوادي آملي اس بيان کے ساتھ کہ قيامت ميں ظلم ذاتي طور پر نہي رہے گا اور ھر شخص اپنے اعمال کا نتيجہ ديکھے گا ، تاکيد کيا : وہ لوگ جو موت کو ا?خري راستہ جانتے ہيں ان کي جہان بيني صحيح نہي ہے ?
آيت الله جوادي آملي

رسا نيوز ايجنسي کے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق حوزہ علميہ قم کے مشہور استاد حضرت آيت الله عبدالله جوادي آملي نے چہارشنبہ کے روز مسجد اعظم ميں اپنے درس خارج ميں طلاب و علماء کے درميان سورہ مومنين کي تفسير کو جاري رکھتے ہوئے اس سورہ کے ا?يات نمبر ?? سے ?? تک کي تفسير بيان کي ?

انہوں نے کہا : بعض لوگ موت کو ا?خري منزل جانتے ہيں اور انسان کي حقيقت کو اس دنيا ميں تلاش کرتے ہيں ، يہ لوگ جن کي جہان بيني يہ ہے ان کي ارزشي نظام بھي يہي ہے ؛ ليکن وہ لوگ جو دنيا کو مبدا اور ايک مقصد والا جس ميں حساب و کتاب ہے اعتقاد رکھتے ہيں ، ان کا راستہ ايک الگ راستہ ہے اور وہ خدا پر ايمان رکھتے ہيں ?

حضرت آيت الله جوادي آملي نے بيان کيا : قيامت کے ميدان ميں کسي بھي طرح کا ظلم نہي ہے ، اور فيصلہ ميں بھي کسي کے لئے بھي کسي طرح کا ظلم نہي ہوگا اور ھر شخص اپنے اعمال کا نتيجہ ديکھے گا ?

قرآن کريم کے مفسر نے لايکلف الله نفسا الا وسعها آيہ کي طرف اشارہ کر کے تاکيد کي : ھر انسان کو اس کے استطاعت اور اھليت کے مطابق حکم ديا گيا ہے اور ھر انسان سے اس کي صلاحيت کے مطابق اميد کي گئي ہے ?

حوزہ علميہ قم کے اس استاد نے وضاحت کي : اسلام کسي بھي غريزہ کو ختم نہي کيا ہے ، بلکہ اس کے اعتدال کا حکم ديا ہے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬