28 May 2011 - 21:35
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 2829
فونت
الوفاق بحرين نے خبر دي ؛
رسا نيوز ايجنسي ـ الوفاق اسلامي تنظيم بحرين نے ا?ل خليفہ حکومت کي طرف سے خواتين کي گرفتاري ميں اضافہ ہونے کي خبر دي ہے ?
ا?ل خليفہ حکومت کي طرف سے خواتين کي گرفتاري ميں اضافہ

رسا نيوز ايجنسي کي رپورٹ کے مطابق الوفاق اسلامي شيعي تنظيم بحرين نے اپنے ايک پيغام ميں ا?ل خليفہ فاسد حکومت کي جانب سے خواتين کي گرفتاري ميں اضافہ ہونے کي خبر دي ہے ?

اس بيانہ ميں ذکر کيا گيا ہے : گذشتہ دو ھفتہ ميں بحرين کے جيل ميں خواتين کو قيد کئے جانے کي تعداد ميں بہت اضافہ ہوا ہے سيکڑوں لڑکيوں کو گذشتہ روز مرکزي پليس ا?فس ميں بلوايا گيا اور ان ميں سے اکثر کو قيد کر ليا گيا ہے ? ابھي تک بہت ہي کم تعداد ميں خواتين کو جيل سے رہا کيا گيا ہے ، ليکن گذشتہ ايام ميں گرفتاري کي تعداد رہا ہونے کے بنسبت بہت زيادہ ہے ?

الوفاق نے وضاحت کي : وہ خواتين جن کو پليس ا?فس تفتيش کے لئے بلوايا گيا تھا وہ سيکورٹي پوليس کي برطاؤ سے شديد خفا ہيں اور ان کو بغير کسي عذر کے وہاں تفتيس کے لئے بلوايا گيا اور ان کے ساتھ سخت توھين ہونے پر افسوس کا اظہار کيا ?

اس تنظيم نے تمام خواتين کو رہا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے وضاحت کي : بحرين ميں خواتين کي گرفتاري اور ان کے ساتھ ہو رہي تشدد اسلامي و عربي سماج کے رواج کے سخت خلاف ہے ، حکام کي پوري ذمہ داري ہے کہ خواتين کے ساتھ ہو رہے مظالم کے نتائج کو قبول کرنے پڑينگے ان کي تفتيش گرفتاري اور جسمي و معنوي و روحي تشدد کا جواب دينا ہوگا اور جيل ميں قيدي تمام خواتين چاہے ڈاکٹر ، نرس ، استاد اور اھل کار ہوں سب کو بہت جلد رہا کيا جائے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬