12 February 2012 - 14:56
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 3788
فونت
قدس اسلامي سپريم کونسل کے صدر :
رسا نيوزايجنسي - قدس اسلامي سپريم کونسل کے صدر نے « وسيع اسرائيل » کے خواب کو شرمندہ تعبير بتاتے ہوئے فلسطينيوں کے خلاف اسرائيل کي بڑھتي ہوئي زيادتوں کي بہ نبست اس غاصب کو خبردار کيا ?
شيخ عکرمہ صبري

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، قدس اسلامي سپريم کونسل کے صدر، شيخ عکرمہ صبري نے « وسيع اسرائيل » کے خواب کو علمي جامہ پہنائے جانے کي غرض سے ايک خاخام کي حاليہ باتوں کو غزه و العريش پہ مجددا قبضہ کو خام خيالي بتاتے ہوئے کہا : عرب کي بہار نے اس خواب کو شرمندہ تعبير کرديا ہے ?

شيخ صبري نے ان اظھارات کے اعتراض ميں اپنے ايک بيان ميں اس سرزمين پر فلسطينيوں کے حق کي تاکيد کرتے ہوئے غاصب صھيونيت کو فلسطيني مرد وعورت اور بچوں پر ظلم و زيادتي اور ان کے مقدسات کي توھين وان کي سرزمين پر قبضہ جمانے سے پرھيز کرنے کي نصيحت کي ?

انہوں نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ طاقت ھرگز کسي کا حق نہي چھين سکتي بلکہ ايسي طاقتيں انسانوں کي نابودي اور ہلاکت کا سبب بنتي ہيں کہا : خاخام کي حاليہ باتيں صھيونيوں کو مزيد مشکلات سے ربرو کرنے کا سبب ہوں گي اور اسرائيلي مملکت کو سختيوں ميں ڈال ديں گي ?

قدس اسلامي سپريم کونسل کے صدر نے عربوں ، مسلمانوں اور قدس کے عيسائيوں کے خلاف نارے لکھے جانے کے سلسلے ميں کہا : يہ نارے سرزمين قدس کے رہنے والوں کے خلاف دشمنوں کے تعصب اور مذھبي اندھے پن کا بيان گر ہے ?

قابل ذکر ہے کہ خاخام شموئيل شبيرا نے حال ہي ميں کہا تھا کہ غزه و العريش « وسيع اسرائيل » کا ايک ٹکڑا ہيں اور اس سلسلے ميں کسي قسم کا اختلاف موجود نہي ہے خصوصا غزہ تورات کي ايتوں کے مطابق اسرائيل کا جزو لاينفک ہے ?

اسي مقصد کے تحت بعض يھودي خاخاموں نے اسرائيل کي ايجوکيشن منسٹري سے مطالبہ کيا ہے کہ « وسيع اسرائيل » کے عنوان سے اسکولوں ميں کتابيں پڑھائي جائيں ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬