19 February 2012 - 16:01
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 3815
فونت
حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي :
رسا نيوزايجنسي - حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي نے سانحہ پاراچنار ميں انتظاميہ کي کاروائيوں پر شديد تنقيد کي ?
حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، قائد ملت جعفريہ پاکستان حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي نے سانحہ پاراچنار کے 37 شہداء کے سوگواروں کے پرامن اور اصولي احتجاج کے دوران سينکڑوں احتجاجي مظاہرين پر مقامي انتظاميہ کے تشدد اور فائرنگ کے واقعات پر شديد ردعمل کا اظھارکيا ?

انہوں نے اس سانحہ اور اس کے بعد احتجاجي مظاہرين پر ظلم و تشدد کي اعلي سطحي تحقيقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا : دہشت گردي ، ٹارگٹ کلنگ اور آئے روز قتل و غارتگري سے متاثرہ مظلوم اور معصوم عوام کي جانب سے پرامن انداز ميں صدائے احتجاج بلند کرنے کے آئيني ، قانوني اور شہري حقوق کو سلب کرنے والے اگر ملک کي داخلي سلامتي اور وحدت کے دشمن شرپسندوں ، قاتلوں، دہشت گردوں اور ٹارگٹ کلرز اور ان کے سرپرستوں کو بے نقاب کرنے اور کيفر کردار تک پہنچانے ميں اگر اپنے فرائض منصبي ديانت دارانہ انداز ميں سرانجام ديں اور اس فتنے کي بيخ کني کيلئے ٹھوس اور سنجيدہ انداز ميں اپني توانائياں صرف کريں تو ملک کو امن و سکون کا گہوارہ بنايا جاسکتا ہے ?

حجت الاسلام سيد ساجد علي نقوي نے مزيد کہا : صورت حال ہميشہ اس کے برعکس ہي رہي ہے يہي وجہ ہے کہ اب تک ہزاروں معصوم اور بے گناہ انسان اس خوني کھيل کي نذر ہوچکے ہيں اور سينکڑوں خاندان اپنے پياروں سے محروم ہوکر غم و الم کي تصوير بنے ہوئے ہيں?ملک زيادہ دير تک ايسے سانحات کا متحمل نہيں ہوسکتا اس لئے دہشت گردوں اور شرپسندوں کو کيفر کردار تک پہنچانا اور ان کے سرپرستوں کو بے نقاب کرکے حقائق عوام تک لانا انتہائي ناگزير ہے ?

قائد ملت جعفريہ پاکستان نے پاکستان کے مسلمانوں سے وہ اس ظلم و بربريت کے خلاف ہر سطح پر صدائے احتجاج بلند کرنے کي اپيل کرتے ہوئے کہا : سانحہ کے 50 سے زائد زخميوں کے علاج معالجے کے لئے فوري و ضروري اقدامات برئوے کارلائيں جائيں اور شہداء کے خاندانوں سے اظہار ہمدردي کرتے ہوئے سانحہ کے مرتکب قاتلوں اور انکے سرپرستوں کو نشان عبرت بنايا جائے ?
قابل ذکر ہے کہ گذشتہ دنوں خودکش بمبار نے اپنے آپ کو فاروقيہ مسجد کے پاس جہاں شيعہ آبادي واقع ہے اپنے آپ کو دھماکہ سے اڑا ليا، جس ميں 26 شيعہ مسلمان موقع پر ہي شہيد ہوگئے اور 50 سے زائد شديد زخمي ہوگئے?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬