29 May 2012 - 16:07
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4164
فونت
رسا نيوزايجنسي- اسرائيل کے فوجي امور کے سابقہ نائب وزيرنے کہا : ايٹمي توانائي کے حوالے سے تھران کو ھر قسم کي چھوٹ تل آويوکيلئے تباہ کن امر ہے ?
5+1 اور ايران کي مشترکہ نشست

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، افرايم سنہ نے اسرائيل نيشنل اور انٹرنيشل ريڈيو سے گفتگو کرتے ہوئے ايران اور 5+1 کي بغداد ميں ہونے والي اخري نشست سے ناراضگي کا اظھار کرتے ہوئے کہا : تہران کے ايٹمي توانائي پروگرام کے سلسلے ميں ھر قسم کا حل وفصل تل آويوکيلئے نہايت خطرناک ثابت ہوگا ?

سنہ نے مزيد بيان کيا : ايران اور 5+1 (چين، روسيہ، انگلينڈ، فرانس، امريکا + جرمن) کي نشستوں پر اسرائيل کي کڑي نگاہ ہے ?

اسرائيلي وزير اعظم بنيامين نيتن ياہو نے ايران اور 5+1 کي بغداد ميں ہونے والي نشست سے ايک دن پہلے دنيا کي طاقتوں سے مطالبہ کيا تھا کہ ايران کے مقابل سستي سے کام نہ ليتے ہوئے ان کے مقابل سخت موقف اپنائيں ?

بنيامين نيتن نے مزيد کہا : يہ طاقتيں ايران کے زير دست اور اس سے مجبور نہيں ہيں بلکہ جوہري توانائي کے حوالے سے ايران سے صاف وشفاف رپورٹ کے طلبگار رہيں ?

بنيامين نيتن ياہو کا يہ بيان عالمي ايٹمي توانائي ايجنسي کے سربراہ يوکيہ آمانو کي ايران کے قومي سپريم سلامتي کونسل کے جنرل سکريٹري سعيد جليلي سے مناسب اور اچھے ماحول ميں جامع اور تفصيلي مذاکرات کي خبردينے کے فورا بعد ايا تھا ?

وينڈي شيرمين ، ايران اور 5+1 سے بغداد ميں ہونے والي نشست کے امريکن نمائندہ نے اس مذاکرات کے ختم ہوتے ہي تل آويو کے حکمرانوں سے ملاقات کي غرض سے مقبوضہ فلسطين کا سفر کيا تھا ?

مگر اسرائيلي وزير اعظم بنيامين نيتن ياہو اور فوجي امور کے اسرائيلي وزيرکي وينڈي شيرمين سے ملاقات سے گريز کرنے کي بناء پر وينڈي شيرمين نے مجبورا اس نشست کي رپورٹ اسرائيلي نيشنل سلامتي کونسل کے مشير ياکو اميڈپرور اوراسرائيلي وزارت خارجہ کے جنرل ڈائريکٹر رفيع براک کے حوالہ کيا تھا ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬