25 June 2012 - 17:38
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4277
فونت
لبنان عدالت :
رسا نيوزايجنسي – عدالتي سيکورٹي کميشن لبنان نے کہا : موصولہ جسم اور لباس جسے امام موسي صدر کا بتايا جارہا ہے وہ امام موسي صدرکا نہيں ہے ?
امام موسي صدر

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، لبنان کے انتقاد نيوز پيپر نے عدالتي سيکورٹي کميشن لبنان کي رپورٹ پيش کرتے ہوئے کہ موصولہ جسم پر انجام شدہ ڈي اين اے ازمائش بيان گر ہے کہ يہ جسم نامورلبناني عالم دين ، امام موسي صدر کا نہيں ہے ?

اس کميشن نے بتايا : امام موسي صدر کے حوالے سے مصطفي عبدالجليل ، ليبيا کے عبوري قومي کونسل کے صدر کے حاليہ بيانات سے ھم حيران رہ گئے ہيں ?

عبدالجليل نے اس بات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہ ھم اجتماعي قبريں کھندنے ميں مصروف تھے کہ ھميں امام موسي صدر کے کپڑے ملے ?

انہوں نے مزيد کہا : ھم معتقد ہيں کہ امام موسي صدر ديگرافراد کي طرح اسي اجتماعي قبر ميں مدفون ہيں ?

عبدالجليل نے العربيہ نيوز چائنل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا : ليبيا کي عدالتي تحقيقاتي کميشن سن 1357 (1978) ميں غائب ہونے والے امام موسي صدر اور ان کے ساتھيوں ، محمد يعقوب اور عباس بدرالدين کي تفصيلات سے پہلي بار دنيا کو اگاہ کرے گي ?

معمرقزافي کے برخلاف موجودہ عبوري حکومت کے ذمہ دار مدعي ہيں کہ امام موسي صدر نے ليبيا کي سرزمين ترک نہيں کي تھي اورعام افکارکے مطابق بھي اس نامور لبناني عالم دين نے ليبيا کي سرزمين نہيں چھوڑي تھي بلکہ جس فرد نے ليبيا کو ترک کيا تھا وہ امام موسي صدر کا ھم شکل تھا ?

امام موسي صدرنے اپنے دو ساتھيوں کے ساتھ ليبيا کے دارالحکومت طرابلس کا سفر ليبيا حکمرانوں سے ملاقات کي غرض سے کيا تھا کہ اغوا کرلئے گئے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬