23 July 2009 - 18:46
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 45
فونت
مولانا مرزا محمد اطہر صاحب شیعہ پرسنلا بورڈ کے صدر
رسا نیوز ایجنسی نامہ نگار کے مطابق - نواسہ رسول اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی مدینہ سے کربلا رخصت کی یاد میں 28 رجب 1430 ھ کو شہر لکھنو کے مختلف امام باڑوں میں مجلس و ماتم کا احتمام کیا گیا

نواسہ رسول اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی مدینہ سے کربلا رخصت کی یاد میں 28 رجب 1430 ھ کو شہر لکھنو کے مختلف امام باڑوں میں مجلس و ماتم کا احتمام کیا گیا مفتی گنج سے ایک جلوس برآمد ہوا جو کہ عزاخانہ میرن صاحب میں اتمام پزیر ہوا جس میں مجلس کو مولانا مرزا محمد اطہر صاحب صدر شیعہ پرسنلا بورڈ نے خطاب کر تے ہوءے حالات حاضرہ میں دہشت گردی کے واقعات اور چودہ سو برس قبل دہشت گردی کے واقعات کا موازنہ کیا مولانا نے کہا نام نہاد مسلمانوں کے دہشت گردانہ کاررواءیوں کی وجہ سے دشمن اسلام کو بدنام کرنے کی کوشش کر رہے ہیں مولانا نے کہا اسلام اللہ کا دین ہے اور انسان بھی اللہ کی مخلوق ہیں تو اسلام میں دہشت گردی کی اجازت کیسے ہو سکتی ہے، در اصل اسلام اور انسانیت کا آپس میں رشتہ ہے مولانا نے کہا کہ دہشت گردی تو آج سے چودہ سو برس قبل بھی تھی جس کے آگے امام حسین علیہ السلام نے سر نہیں جھکایا اور جس کے سب سے پہلے شکار حضرت علی علیہ السلام ہوءے جن کو ابن ملجم نے اپنی دہشتگردانہ حرکت سے حالت نماز میں مسجد میں شہید کیا ،مولانا نے مجلس میں دہشت گردی کے خلاف تفصل سے گفتگو کی اور دہشت گردوں کا اسلام سے دور دور تک واسطہ نہ ہونے کا ذکر کیا۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پربحث
پسندیده خبریں