24 September 2012 - 15:36
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4600
فونت
ھندوستان کے مسلم علماء کا مطالبہ:
رسا نيوز ايجنسي – شھر لکھنو ھندوستان کے مسلم علماء نے ايک بار پھر احتجاجي نشست کا انعقاد کرکے اقوام متحدہ توہين رسالت کے ذمہ داروں کو سخت سزائيں دلوانے کا مطالبہ کيا ?
احتجاجي نشست اقوام متحدہ توہين رسالت کے ذمہ داروں کو سخت سزائيں دلوائے

رسا نيوزايجنسي کے رپورٹر کي رپورٹ کے مطابق، لکھنو کے شيعہ اور سني علماء نے اتحاد اسلامي کا مظاھرہ کرتے ہوئے ايک بار پھر ہوٹل ميزبان ميں گستاخانہ فيلم کے خلاف احتجاجي نشست کا انعقاد کيا ?

اس نشست ميں لکھنو کے امام جمعہ حجت الاسلام سيد کلب جواد نقوي، قاضي شہر مفتي ابو العرفان فرنگي محلي، مولانا محمد جابر جوراسي، مولانا رضا حسين جرولي، مولانا رضا حسين، مولانا مقداد حسين، مولانا علي قاسم، مولانا تسنيم مہدي، مولانا محمد وسيم، مولانا امير حيدر، مولانا محمد موسي? رضوي، مولانا علمدار حسين، مولانا عازم حسين، مولاناوصي رضاعابدي، وديگر علماء کرام نے شرکت کي?

مسلم مذھبي رہنماوں نے اسلام مخالف سازشوں پرسخت ناراضگي کا اظہار کرتے ہوئے کہا: مسلم ممالک اور مسلم حکمراں اب بھي امريکہ اور فرانس پر دبائو بناتے نظر نہيں آتے جب کہ امت مسلمہ پوري دنيا ميں اس بے حرمتي پر مشتعل ہو کر سراپا احتجاجي بن چکي ہے?

لکھنو کے امام جمعہ حجت الاسلام سيد کلب جواد نقوي نے اپني اپيل پر ايک بار پھر مزہبي رہنماوں کي حاضري کا شکريہ ادا کرتے ہوئے اسلام کے خلاف فلم، کارٹونز کے ذريعہ اہانت رسول(ص) پر سخت ناراضگي کا اظھار کيا ?

قاضي مفتي ابوالعرفان فرنگي محلي نے يہ کہتے ہوئے کہ صيہوني طاقتوں کے ذريعہ مقدسات اسلامي کي توہين کا سلسلہ جاري ہے تاکيد کي : ابھي 18ستمبر کو توہين آميز فلم پر کوئي لائحہ عمل طے نہ پايا تھا کہ فرانس ميں کارٹون کے ذريعہ توہين رسالت کا ايک نيا باب کھولا گيا اور جو مسلمان فرياد يا رسول اللہ بلند کرنا چاھتا ہے اسے گوليوں کا نشانہ بنا کر ھميشہ کيلئے خاموش کر ديا جاتا ہے مگر توہين کرنے والوں کو سزا نہيں دي جارہي ہے ?

قابل ذکر ہے کہ علماء اہلسنت واہل تشيع نے متفقہ طور سے يہ فيصلہ کيا کہ 25 ستمبر 4 بجے سہ پہر کو پريس کلب ميں پريس کانفرنس کے ذريعہ احتجاج کا اعلان کيا جائيگا?

واضح رہے کہ اسي سلسلہ سے اس سے قبل ہوئي ميٹنگ ميں بھي آل انڈيا شيعہ پرسنل لاء بورڈ کے کچھ ذمہ داروں کو دعوت نامہ بھيجا گيا تھا ليکن کسي کے شرکت کي تصديق نہيں ہوئي ?


تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬