30 September 2012 - 14:34
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4618
فونت
مسجد النبي کے امام جمعہ امريکا کے ھم صدا:
رسا نيوزايجنسي - مسجد النبي(ص) سعوديہ عربيہ کے امام جمعہ نے توھين ا?ميز فيلم اور گستاخانہ خاکہ کے خلاف مظاھرے اور اجتماعات کو اسلامي تعليمات کے برخلاف جانا?
شيخ علي الحذيفي


رسا نيوزايجنسي کي النسيج سے منقولہ رپورٹ کے مطابق، مسجد النبي(ص) کے امام جمعہ شيخ علي الحذيفي نے مدتوں بعد گذشتہ روز اس مسجد ميں خطبہ ديتے ہوئے سعودي حکومت اور ديگر علماء سعودي کے مانند توھين ا?ميز فيلم اور گستاخانہ خاکہ کے خلاف مظاھرے اور اجتماعات سے پرھيز کي تاکيد کي ?

انہوں نے اس بات پر زور ديتے ہوئے کہ مظاھرے اسلامي تعليمات کے برخلاف ہيں کہا: اس گستاخي کے جواب کا بہترين طريقہ سنت نبوي سے متمسک ہونا اور احکام شريعت کا رواج ہے ?

الحذيفي نے مزيد کہا: دنيا کے مسلمان عبادت الھي ميں توحيد پروردگار پر توجہ اور شرک خداوند عالم سے دوري کريں اور اسلامي تعليمات کے برخلاف تمام سرگرميوں سے پرھيز کريں ?

واضح رہے کہ علي الحذيفي نے کچھ دنوں پہلے نمازجمعہ ميں شيعيت کي توھين کي تھي جس سے شيعوں ميں اعتراضات کي لہريں دوڑ گئيں تھيں، جس کے نتيجہ ميں سعوديہ کے بادشاہ نے مجبور ہوکر انہيں نماز جمعہ کي امامت سے برکنار کرديا تھا ?

علي الحذيفي نے نماز جمعہ کے خطبے ميں شيعہ عقائد کا مزاق اڑاتے ہوئے پيروان اھلبيت عليھم السلام کو دين اسلام سے باہر بتايا تھا ?

قابل ذکر ہے کہ سعوديہ کے مفتي شيخ عبد العزيز بن عبد الله آل الشيخ نے بھي اپنے فتوي ميں توھين ا?ميز فيلم کے خلاف ھرقسم کے مظاھرے اور اجتماعات کو حرام اعلان کيا ہے ?

انہوں نے بھي مسجد النبي(ص) کے امام جمعہ کي طرح تاکيد کي تھي کہ مسلمان توھين ا?ميز فيلم کے اعتراض ميں مظاھرے اور اجتماعات کرنے کے بجائے بہتر ہے نصيحتوں کے ذريعہ اس توھين کا جواب ديں ?

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬