01 October 2012 - 16:57
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 4625
فونت
رسا نيوزايجنسي - المصطفي ورچوئل يونيورسٹي کے اسٹوڈنٹس نے ارسال کردہ بيانيہ ميں توھين پيغمبراسلام(ص) کي شديد الفاظ ميں مذمت کي ?
المصطفي ورچوئل يونيورسٹي

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق، المصطفي ورچوئل يونيورسٹي کے اسٹوڈنٹس نے ارسال کردہ بيانيہ ميں توھين پيغمبراسلام(ص) کي شديد الفاظ ميں مذمت کرتے ہوئے مغربي دنيا کي اقتصادي، سياسي اور سماجي مشکلات اس گستاخي کي بنياد جانا ?

اس پيغام ميں ايا ہے: ايک بار پھر امريکي اور صھيوني سازش کے چہرے سے نقاب ہٹي ، اور مغرب نے رسول محبت وشفقت، حضرت محمد بن عبدالله (ص) کي نوراني شخصيت کي توھين سے اسلام اور مسلمانوں سے اپني دشمني اشکار کردي اور پيغمبراسلام(ص) کي توھين ا?ميز فيلم بناکر اسلام کو ضرب لگانے کي سعي لاحاصل کرڈالي ?

المصطفي ورچوئل يونيورسٹي کے اسٹوڈنٹس نے مزيد کہا: يہ اھانتيں ان لوگوں کي جانب سے رونما ہورہي ہيں جو اپنے ناپاک اور شيطاني اھداف تک رسائي کے لئے انساني حقوق اور ازادي بشر کي فرياديں بھرتے ہيں جبکہ وہ خود سب سے بڑے انساني حقوق کے نقض کرنے والے اور دنيا ميں تمام ان ظالم طاقتوں کے حامي ہيں جو امريکا اور مغربي دنيا کے منافع کي تامين ميں مصروف ہيں ? اج کسي پر پوشيدہ نہيں کہ صھيوني اور امريکي جنايت کار اور ان کے متعلق افراد اپنے منحوس چہرے ، ازادي اور انساني حقوق کي نقاب کے پيچھے نہيں چھپا سکتے ?

المصطفي ورچوئل يونيورسٹي نے تاکيد کي : يہ لوگ جان ليں کہ رسول اسلام(ص) کي توھين سورج پرايک مشت خاک ڈالنے برابر ہے اور خدا کي عنايتوں سے «رحمه للعالمين» کے ماننے والوں کي محبتوں ميں زرہ برابر بھي کمي نہ ائے گي مگر اس کے باوجود پس پردہ امريکا اور غصب صھيونيت سے ہاتھ ملائے بيٹھے بعض اسلامي ممالک کے حکمرانوں کے لئے امتحان کي سخت گھڑي ہے ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬