19 November 2009 - 13:37
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 576
فونت
آيت الله مصباح يزدي:
رسا نيوز ايجنسي - آيت الله مصباح يزدي نے گذشته شب اپني نصيحت اموزتقرير ميں کہا : مومن کي ہنسي ، غم ، سکوت اور لب کي جنبش با معني ہے
آيت الله مصباح يزدي


رسا نيوز ايجنسي کي رپورٹر کي رپورٹ کي مطابق، آيت الله محمد تقي مصباح يزدي، تعليمي اورتحقيقي ادارہ امام خميني(ره) کے سربراہ ، نے علماء وطلاب اورجوانوں کے درميان اپنے درس ميں اپني نصيحت اموز .


اس جلسہ ميں آيت الله مصباح نے اميرالمومنين امام علي (ع) کے بيان کي جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ اگر طے ہو کہ مومن خاموش رہے تو اپني خاموشي سے عاجز نہي اتا اور اگر طے ہو اپنے لب کھولے تو بولنے سے بھي نہي گھبراتا کہا : مومن ھميشہ اپنے وظائف پر عمل کرتا ہے.

 
انہوں نے مزيد کہا : اگر مومن خاموش رہے تو کوئي چيزحتي شکنجه بھي اسکا سکوت نہي توڑ سکتا اور جب بولتا ہے تو ھميشہ محکم ، حشاش بشاش اور اپنے وظيفے کے تحت گفتگو کرتا ہے   .


حضرت آيت الله نے بعض علماء کي ادات و اتوارکي جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا : علمي ميدان ميں خاموشي جب وظيفہ نہ ہو تو خاص ملکہ کا محتاج ہے اور ايسے ملکہ کا مالک اپنے نفس کا مالک ہے .


انہوں نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ غير الهي اور غير معنوي غم  بے فائدہ ہے تاکيد کي : مومن کبھي بھي دوسروں فضول غم ميں مبتلاء نہي کرتا.


آيت الله مصباح يزدي نے اخر ميں کہا : مومن علم واگاھي اور مکمل اختيار کے ساتھ ميدان ميں اترتا ہے ،اسکي گفتگو اورہنسي اور اسکے لبوں کي جنبش بامعني ہے .

 

 

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬