22 November 2009 - 13:19
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 587
فونت
مجمع علماء اهل سنت عراق کے سربراہ :
رسا نيوز ايجنسي - شيخ خالد عبدالوهاب ملا نے اليکشن قوانين ميں وٹوکو عراق کے دشمنوں کي خدمت بيان کيا .
عراق


رسا نيوزا يجنسي کي رپورٹ کے مطابق، شيخ خالد عبد الوهاب ملا، مجمع علماء اهل سنت عراق کے سربراہ نے اپنے بيا نيہ ميں صدرجمهوريہ کے نائب طارق الهاشمي کے توسط اليکشن قوانين کو وٹو کئے جانے کو سياسي نظام کے مخالفين کي خدمت بيان کيا .

   
اس بيانيہ ميں ايا ہے : اليکشن قوانين کا وٹو نظام کے مخالفين جيسے بعث پارٹي اور تکفيري گروپ کي خدمت ہے يہ کام قوم کےجذبات کے مقابل کھڑے ہونے کے مانند اورملک کو بحراني حالت ميں قرار دينے کے مساوي ہے .


انہوں نے طارق الهاشمي کے اس اقدام سے تعجب کا اظھارکرتے ہوئےعراقي قوم کو اس کے خلاف احتجاج کرنےکي دعوت دي .


قابل ذکر ہے کہ عراقي صدرجمهوريہ کے نائب طارق الهاشمي نے پريس کانفرنس ميں اليکشن قوانين کے بعض بند سے جو گذشته هفته عراق کي پارليمنٹ ميں تصويب کيا گيا مخالفت کا اعلان کيا ہے اورانہوں نے اپنے حق وٹوسے استفادہ کرنے کا دعوي کي ہے.

 
انہوں اس قانون کے بعض بند کي جانب اشارہ کرتے ہوئے ادعي کيا کہ اس قانون ميں 4 سے 5 اساسي خامياں ہيں جس پردوبارہ گفتگوہوني چاھئے .


ھاشمي نے عراقي گورمنٹ کےبعض قوانين پرتنقيدي نگاہ ڈالتے ہوئے تذکرہ کيا کہ اس قانون ميں وہ عراقي مھاجرجو ملک سے باھر ہيں ان کے سلسلے ميں يہ قانون خاموش ہے اور اس کےعلاوہ  فقط 5 پرسنٹ سيٹ ملک سے باھر رہے والےعراقي مھاجرين سے مخصوص ہے.

 

 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬