25 November 2009 - 13:10
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 606
فونت
آيت ‌الله ممدوحي:
رسا نيوزا يجنسي - مجمع مدرسين حوزه علميه قم کے رکن نے کہا : حضرت امام محمد باقر(ع) نے شاگردوں کي تربيت اور مراکزعلمي کي تاسيس کرکے مخالفوں سے سياسي مقابلہ کيا کرتے تھے.
آيت ‌الله ممدوحي



آيت‌الله حسن ممدوحي، مجمع مدرسين حوزه علميه قم کے رکن نے رسا نيوز ايجنسي کے رپورٹرسے انٹرويوميںحضرت امام محمد باقر(ع) کي شھادت کي مناسبت سے تسليت پيش کرتے ہوئے کہا : حضرت امام باقر(ع) مکتب تشيع کے پايه گذارہيں . 

 
انہوں نے ان امام همام سے منقول کثير روايات جس سے فقھاء فقھي استدلات ميں استفادہ کرتے ہيں اشارہ کرتے ہوئے کہا :  حضرت امام باقر(ع) لوگوں کو فقھي جوابات ديا کرتے تھے اسي بناء پر بہت ساري روايا ت موجودہ روايتيں اپ سے منقول ہيں .


اپ نے بيان کيا:  حضرت امام باقر(ع)زمانہ ايسا زمانہ تھا جب حکومت وقت کا دباو بہت کم تھا لھذا حضرت ازادي کے ساتھ اپنے نظريات بيان کرسکتے تھے يعني تقيہ  کا زمانہ ختم ہوگيا تھا اورحضرت اپنے عمل ميں ازاد تھے .


آيت‌الله ممدوحي نے کہا : اگر چہ اس کام کوحضرت امام صادق(ع) نے مکمل کيا اور حقيقتا مکتب شيعه کي ترقي انکي مرحوم منت ہےاور اسي لحاظ سے اپ کو موسس مذهب جعفري کہتے ہيں مگر اسکي بنياد امام محمد باقر(ع) نے رکھي تھي .


انہوں نے ياد دہاني کي : امام محمد باقر(ع) کے زمانے ميں حکومت دشمنوں کے ہاتھ ميں اور اس معصوم امام نے شاگردوں کي تربيت اورعلمي مکاتب کي تاسيس کرکے مخالفين کے ساتھ مقابلہ کيا  .

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں