10 April 2012 - 18:11
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 3970
فونت
شيعوں کي توھين کے سبب ؛
رسا نيوزايجنسي – سيھات عربستان کے امام جمعہ نے تاکيد کي کہ شيعہ خاتوں کي توھين کرنے والے ايک سعودي وکيل کي شکايت کريں گے ?
سعودي کے شيعہ ايک سعودي وکيل کي شکايت کريں گے

رسا نيوزايجنسي کي رپورٹ کے مطابق ، سيھات عربستان کے امام جمعہ حجت الاسلام سيد حسن نمر نے ايک بيانيہ ميں تاکيد کي کہ ابن زاحم نامي ايک سعودي وکيل کي شيعوں کي توھين کے سبب شکايت کريں گے ?

سيھات عربستان کے امام جمعہ کے بيانيہ ميں ايا ہے : ميں سعودي وکيل ابن زاحم کي شکايت کي بہ نسبت سنجيدہ ہوں اور اس سلسلے ميں تمام مراکز سے درخواست کروں کا وہ ھمارا ساتھ ديں ?

سيد حسن نمر نے مزيد کہا : ابن زاحم کا يہ عمل مذھبي فتنے کا سبب بنے گا لھذا معاشرے کے تمام لوگ اس کے مقابل قدم اٹھائيں اور ھرگز موقع نہ ديں کہ اس قومي اتحاد کو کسي قسم کا خطرہ پيش ائے ?

انہوں نے سعودي حکام کو ايسے اقدامات کے مقابل سنجيدہ رہنے کي تاکيد کرتے ہوئے کہا : شيعہ خاتون کي توھين کرنے والے ابن مزاحم کو واقعي سزا ديا جانا ھمارا مطالبہ ہے ?

سيھات عربستان کے امام جمعہ نے يہ بيان کرتے ہوئے کہ يہ ملک تمام افراد سے متعلق ہے کہا : بعض افراد تصور کرتے ہيں کہ يہ ملک فقط انہيں سے متعلق ہے اور ديگر افراد کو اس ملک ميں کسي قسم کا حق نہي ہے ?

حجت الاسلام نمر نے اخر ميں تاکيد کي : ميں ان تمام سني بھائيوں کا جنہوں نے اس توھين کي مذمت کي ہے شکر گذار ہوں اور اس ميں شک نہي کہ ان کے يہ جزبات اسلامي تعليمات کي بنياد پرہيں ?

قابل ذکرہے کہ سعودي کے بعض سني افراد نے حکومت سے مطالبہ کيا ہے حکومت اس گستاخ وکيل کي وکالت کا لائسنس منسوخ کردے تاکہ دوسروں کے لئے درس عبرت ہو ?
تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬