22 September 2013 - 16:11
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 5963
فونت
رسا نیوز ایجنسی ـ مطابق پشاور کے گرجا گھر کے باہر خود کش دھماکے میں سیکڑوں لوگ جان بحق ہوئے ، اس حادثہ میں لقمہ اجل بننے والوں میں خواتین بچے بھی شامل ہیں ۔
پشاور چرچ


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پشاور کے گرجا گھر کے باہر خود کش دھماکے میں سیکڑوں لوگ جان بحق ہوئے ، اس حادثہ میں لقمہ اجل بننے والوں میں خواتین بچے بھی شامل ہیں ۔

120 سے زائد زخمیوں میں سے کئی کی حالت تشویش ناک ہے ،ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

صدر، وزیر اعظم سمیت سیاسی اور ، مذہبی راہنماؤں نے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ، ایم کیو ایم اور عوامی نیشنل پارٹی نے تین دن کے سوگ کا اعلان کیا ہے۔

خود کش دھماکے کے خلاف کونسل برائے عالمی مذاہب کی جانب سے 3 روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے، کونسل برائے عالمی مذاہب کے مطابق تمام مشنری اسکول اورکالج 3 دن بند رہیں گے۔

پشاور کے لیڈی ریڈنگ اسپتال میں25سے زائد لاشیں لائی گئیں جبکہ دیگر لاشیں دیگر اسپتالوں میں بھی منتقل کی گئیں۔

کمشنر پشاور کے مطابق دھماکا اس وقت ہوا جب لوگ گرجا گھرسے باہرنکل رہے تھے، ملنے والے شواہد سے حملہ خودکش معلوم ہوتا ہے ۔

چرچ میں دھماکا ایک قومی سانحہ ہے ، ایس پی سٹی پولیس کا دھماکے کے حوالے سے کہنا ہے کہ عینی شاہدین کے مطابق2 دھماکے ہوئے ، مزید تحقیقات کی جارہی ہیں ، دھماکے میں ایک پولیس اہلکار جاں بحق اور ایک شدید زخمی ہوا جسے تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ۔

پاکستان چرچ پشاور کے قدیم ترین گرجا گھروں میں سے ایک ہے اور اتوار کے روز بڑی تعداد میں مسیحی برادری عبادت کیلئے گرجا گھرآتی ہے، جن کی تعداد سیکڑوں میں بتائی جارہی ہے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬