15 June 2014 - 16:53
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 6895
فونت
دھشت گردی کے حامی میڈیا سے وہابی علماء کی درخواست:
رسا نیوز ایجنسی – عراق کے وہابی دھشت گرد علماء نے دھشت گردی کے حامی میڈیا سے پروپگنڈے اور جھوٹی خبریں نشر کرنے کا مطالبہ کیا ۔
حارث الضاري


رسا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کی رپورٹ کے مطابق، عراق کے وہابی دھشت گرد علماء نے اپنے ارسال کردہ پیغام میں عراق کے بعض شہروں پر دھشت گرد گروہ داعش کے قبضہ پر خوشی کا اظھار کرتے ہوئے نے دھشت گردی کے حامی میڈیا سے پروپگنڈے اور جھوٹی خبریں نشر کرنے کی درخواست کی ۔


اس پیغام میں ایا ہے : صوبہ نینوا پر مجاھدین فی سبیل اللہ کے قبضہ کے بعد اس بات پر توجہ لازمی ہے کہ فوجی کامیابی کے ساتھ ساتھ میڈیا بھی بعض مسائل اور نکات پر توجہ کرے ۔


عراق کے وہابی دھشت گرد علماء نے مزید کہا: ٹی وی ریڈیو اور دیگر تمام میڈیا سے ہمارا مطالبہ ہے کہ  پروپگنڈے اور جھوٹی خبریں نشر کریں تاکہ دشمن کے دل میں خوف و وحشت بیٹھ جائے ، اور اس سلسلہ میں نوری مالکی اور عراقی فوج کی ناکامی کی خبریں ضرور نشر کی جائیں ۔


انہوں ںے مزید کہا: میڈیا معروف شخصیتوں کا انٹرویو لے تاکہ وہ لوگ ہم سے اپنی رابطے و ہمدردی کا اظھار کرسکیں اور عراقی فوج پر کاری ضرب لگ سکے ، جھوٹی خبروں کا نشر کیا جانا اور پیروزی کی حمایت میڈیا کی اہم ذمہ داری ہے ۔


دھشت گرد علماء نے تاکید کی : بعث پارٹی کی تعلیمات کو منظر عالم پر لائیں اور وہ بیانیہ جو رعب وحشت اور خوف کا سبب بنے ، شھریوں کے جزبات کے ٹوٹنے کا باعث ہو نیز فوج میں یاس و نا امید پیدا کرے ایسی خبریں نشر کریں اسکے علاوہ فوجیوں کو پھانسی کے تختہ پر لٹکائے جانے کی تصاویر بھی نشر کریں جس سے ان کے دل ہمارا خوف کا بیٹھ جائے ۔


واضح رہے کہ بعث پارٹی سے متعلق علمائے مسلمین نامی کچھ دھشت گرد وہابی علماء ، عراق میں دھشت گردی کے حامی ہیں ۔


یہ کمیٹی عراق کی موجودہ حکومت اور نوری مالکی کو ایران کا غلام بتاتی ہے اور معتقد ہے کہ اس وقت عراق پر ایران کا قبضہ ہے ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬