15 February 2016 - 13:46
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 9069
فونت
ایرانی وزیر خارجہ:
رسا نیوز ایجنسی – اسلامی جمھوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے گذشتہ شب بریسلز میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شامی عوام ایک خود مختار عوام ہے جسے کسی سرپرست کی ضرورت نہیں ہے ۔
محمد جواد ظريف محمد جواد ظريف

 

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، اسلامی جمھوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے گذشتہ شب بریسلز میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے تاکی کی: شامی عوام ایک خود مختار عوام ہے جسے کسی سرپرست کی ضرورت نہیں ہے ۔


انہوں نے شام پر لشکر کشی کے لئے بعض ملکوں کے حالیہ دعوے کو محض پروپیگنڈہ بتایا اور کہا: ان ملکوں کے وسائل و ذرائع اور صلاحیتیں مکمل طور پر سب پر عیاں ہیں اور ان نعروں اور پروپیگنڈوں سے ان کے مسئلے کا کوئی حل نکلنے والا نہیں ہے۔ لیکن جو دعوے پیش کئے جارہے ہیں وہ علاقے میں مزید کشیدگی اور خطرات وجود میں آنے کا باعث بن سکتے ہیں ۔


محمد جواد ظریف یہ کہتے ہوئے کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ علاقے کے ممالک حقائق پر توجہ کے دینے کے ساتھ ہی توہمات سے دوری اختیار کریں تاکید کی : شامی عوام کے مطالبات پر توجہ دیں اور اس ملک کے عوام کے تعلق سے کوئی فیصلہ نہ کریں ۔


انہوں نے مزید کہا : شام کے عوام کو کسی کی سرپرستی کی ضرورت نہیں ہے اور وہ خود ہی اپنے مستقبل کے بارے میں فیصلہ کریں گے۔


اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے اپنے دورہ بریسلز کے اہداف کا ذکر کرتے ہوئے علاقائی مسائل اور خاص طور پر یمن کے حوالے سے تبادلۂ خیال کرنا بتایا اور کہا: ایران اور یورپی یونین کے درمیان مذاکرات، معاونین کی سطح پر شروع ہوچکے ہیں اور آئندہ دنوں میں یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ فیڈریکا موگرینی کے دورہ ایران کے موقع پر یہ مذاکرات یورپی یونین کے مختلف کمیشنوں کے ساتھ جاری رہیں گے ۔


انہوں نے مزید کہا: یمن کے مظلوم عوام کے خلاف سعودی عرب کے غیر قانونی وحشیانہ حملوں کا روکا جانا کہ جس کا مطالبہ پوری عالمی برادری کر رہی ہے، اس دورے میں تبادلۂ خیال کا ایک اہم موضوع ہوگا ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬