20 August 2014 - 08:31
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7158
فونت
شیعہ علماء کونسل پاکستان :
رسا نیوز ایجنسی ـ شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل نے کہا : ملک میں موجودہ سیاسی بحران کو افہام و تفہیم اور مذاکرات کے ذریعے حل کیا جائے ۔
حجت الاسلام عارف حسين واحدي


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل حجت الاسلام عارف حسین واحدی نے کہا : ملک میں موجودہ سیاسی بحران کو افہام و تفہیم اور مذاکرات کے ذریعے حل کیا جائے ۔ تصادم اور ٹکراو کی پالیسی ملک کے استحکام کے لئے سخت نقصان دہ ہے ۔

انہوں نے بیان کیا : ریاست اور جمہوریت کا تحفظ ہر محب وطن پاکستانی کی ذمہ داری ہے اور سول نافرمانی جیسے مسائل مناسب نہیں اس لئے پاکستان کے عوام نے اسے مسترد کردیا ہے ۔ یہ ملک مصر ، لیبیا ، شام ، بحرین ، عراق و افغانستان جیسے حالات کا متحمل نہیں ہوسکتا ۔ ملک کے ذمہ دار طبقات کو ان حساس حالات میں متوجہ رہنا چاہیے اور ہوشیاری کے ساتھ امور کو سنبھالنا ہو گا ۔ ورنہ اگر اسی طرح مسائل آگے بڑھے تو حالات بگڑ سکتے ہیں جس سے ملکی استحکام کو خطرناک صورتحال کا سامنا ہو گا اور عوام کی مشکلات میں اضافہ ہو سکتا ہے ۔

حجت الاسلام عارف حسین واحدی نے تاکید کی : عالمی سامراجی طاقتیں عرصے سے چاہتی ہیں کہ اس ملک میں انتشار و افتراق پھیلا کر اس کو کمزور کیا جائے اور اب وقت ہے کہ پوری امت اور تمام دینی و سیاسی جمہوری طاقتیں سر جوڑ کر بیٹھیں ان تنازعات کو جمہوری و آئینی طریقے سے مذاکرات اور افہام و تفہیم کے ساتھ حل کریں ۔

شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل نے وضاحت کی : حکمرانوں اور اپوزیشن دونوں کی ذمہ داری ہے کہ تصادم اور تشدد کی ساست سے پرہیز کریں عوام کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے ۔

انہوں نے کہا : اس ملک کے بہت سے سلگتے مسائل ہیں ان پر توجہ دے کر حل کیا جائے اس وقت عوام سخت مشکلات میں ہیں ان کو ریلیف دینے کی طرف توجہ دینی کی ضرورت ہے۔ احتجاج کرنے والوں کے مطالبات میں بہت سے آئینی ہیں تو حکومت کو وہ جائز مطالبات پورے کرنے چاہئے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬