27 February 2016 - 11:13
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 9112
فونت
ہندوستان کے شہرہ آفاق خطیب؛
رسا نیوز ایجنسی – ہندوستان کے شہرہ آفاق خطیب، خطیب اکبر مولانا مرزا محمد اطہر صاحب ایک طول علالت کے بعد گذشتہ روز انتقال کر گئے ۔
مولانا مرزا محمد اطہر


 رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، ہندوستان کے شہرہ آفاق خطیب،  خطیب اکبر مولانا مرزا محمد اطہر صاحب ایک طول علالت کے بعد گذشتہ روز اسّی برس کی عمر میں انتقال کر گئے ۔


اس رپورٹ کے مطابق، مولانا مرزا محمد اطہر صاحب کو پہلے لکھنؤ میں اسپتال میں داخل کرایا گیا اس کے بعد ڈاکٹروں کے مشورے پر انہیں علاج کے لئے دہلی لے جایا گیا۔


وہ پچھلے کئی ہفتے سے وہ دہلی کے ایک اسپتال میں زیرعلاج تھے جہاں گردے فیل ہو جانے سے ان کا جمعے کی دو پہر انتقال ہوگیا۔


مولانا مرزا محمد اطہر صاحب مولانا مرزا طاہر صاحب کے فرزند، لکھنؤ میں پیدا ہوئے اور وہیں انہوں نے دینی اور دنیوی تعلیم حاصل کی، انھوں نے لکھنؤ کی معروف دینی درسگاہ سلطان المدارس سے صدرالافاضل کیا اور فارسی میں بھی انہوں نے ایم اے کی ڈگری حاصل کی۔


انھیں عربی اور فارسی ادب اور دینیات پر مہارت حاصل تھی۔ وہ لکھنؤ کے شیعہ پی جی کالج میں برسوں تک فارسی ادب کی تدریس میں مشغول رہے ہیں ۔


مولانا مرزا محمد اطہر نے دنیا کےگوشہ و کنار میں اپنی بے مثال خطابت سے علوم محمد وال محمد علیھم السلام نشر کرنے میں اپنی زندگی بسر کی مگر ممبئی کی مغل مسجد میں اٹھّاون برس تک بلا وقفہ عشرہ محرم کی مجالس کو خطاب کیا جو کسی بھی خطیب کے لئے ایک غیر معمولی کارنامہ ہے۔


مولانا مرزا محمد اطہر نے شیعہ پرسنل لاء بورڈ کی بھی بنیاد ڈالی اور آخری عمر تک اس کے صدر رہے۔ مولانا مرحوم کو لکھنؤ میں سپرد خاک کیا گیا ۔


وہ اپنی بے مثال خطابت کی بنا پر خطیب اکبر کے نام سے معروف تھے ان کی رحلت سے برصغیر کے مسلمان عوام، ایک عظیم خطیب سے محروم ہوگئے ہیں ۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬