10 November 2014 - 16:51
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7466
فونت
حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری:
رسا نیوز ایجنسی – مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سربراہ نے اپنے خطاب میں کہا : ریاست کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ عوام کو تعلیم کے یکساں مواقع فراہم کرے لیکن ظالم حکمرانوں نے غریب و مجبور عوام سے تعلیم کا حق بھی چھین لیا ہے۔
راجہ ناصر عباس جعفري


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سربراہ حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری نے اپنے دورہ اسکردو کے موقع پر الزہرا کالج اسکردو کے زیراہتمام سانحہ کمنگو میں جاں بحق ہونے والے مرحومین کے چہلم کی تقریب میں شرکت کی ۔


انہوں نے اس پروگرام میں تقریر کے دوران کہا: امام علی (ع) کا دکھ اور غم یہ تھا کہ معاشرہ کہیں جاہل نہ رہ جائے، معاشرے پر کہیں ظلم و ستم حاکمیت نہ کرے، معاشرے میں ظلم حاکم ہو تو آئمہ (ع) غمزده ہوتے ہیں کیونکہ ظلم کی کوکھ سے یزید و شمر جنم لیتا ہے، بس ہمیں چاہئے کہ معاشرے سے ظلم و ستم اور جہالت کا خاتمہ کریں، ہمارے ملک میں آخر کون ہوگا جو ظلم کی چکی میں پسے لوگوں کا درد ختم کرے گا؟


حجت الاسلام جعفری نے اس بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ آج ملک میں طبقات ہیں، لاقانونیت ہے قانون کی حفاظت کے دعویدار خود قانون شکن ہیں جس کی مثال سانحہ ماڈل ٹاون ہے کہا: عجیب ہے کہ گاڑیاں توڑنے والے کو سزا دلوائی گئی لیکن لاشیں گرانے والے آزاد ہیں ، آخر کب کمزور لوگوں کو ان کا حق ملے گا، کب یہ تبدیلیاں آئیں گی اورکون لائے گا ،  ہم سب کو کوشش کرنا ہوگی جو کچھ کوٹ رادھا کشن میں ہوا وہ سراسر لاقانونیت اور جہالت ہے جو کچھ پولیس نے ایک ذاکر کے ساتھ کیا وہ بربریت اور لاقانونیت ہے۔


انہوں نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ گلگت بلتستان میں عوام جہاں معاشی طور پر، سماجی طور پر مجبور و محروم ہیں وہیں یہاں کی عوام کو میدان علم میں  پیچھے ڈھکیلا گیا ہے اور تعلیم کے سلسلے میں بھی انہیں محروم رکھا گیا ہے کہا: تعلیم معاشرہ میں  بسنے والے تمام انسانوں کا بنیادی حق ہے ، ریاست کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ عوام کو تعلیم کے یکساں مواقع فراہم کرے لیکن ظالم حکمرانوں نے غریب و مجبور عوام سے تعلیم کا حق بھی چھین لیا ہے۔


ایم ڈبلیو ایم کے سربراہ نے یہ کہتے ہوئے کہ گلگت بلتستان کے تعلیم اداروں میں بدعنوانیاں عروج پر ہیں کہا: یہاں کی نئی نسل کو معیاری تعلیم سے محروم رکھا جا رہا ہے، ایسے میں الزہرا کالج نے اس محروم خطہ میں نور علم پھیلانے کا جو بیڑا اٹھایا وہ نہایت مستحسن ہے خدا انکو مزید حوصلہ عطا کرے اور حالیہ امتحان میں  صبر سے سرفراز فرما۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬