25 October 2015 - 14:29
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 8597
فونت
حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری :
رسا نیوز ایجنسی ـ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے بیان کیا : بلوچستان کے علاقے نصیر آباد بولان میں نہتے عزاداروں پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا : دشمن ہمیں موت سے ڈرا کر عزاداری کو محدود کرنے کی سازش میں ہیں۔
حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفري


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ حجت الاسلام راجہ ناصر عباس جعفری نے عاشورا کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں کیا : سید شہداء امام حسین علیہ السلام کی قربانی اسلام کی بقا اور دنیا بھر کے مسلمانوں کے لئے درس حریت و آزادی کا ناقابل فراموش نمونہ ہے ۔

انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے بیان کیا : فلسطین، کشمیر، یمن،شام ، بحرین، لبنان اور عالم اسلام کے دیگر ممالک میں وقت کے یزید نے کربلائیں برپا کی ہوئی ہیں، جن کا مقابلہ کرنے والے دور حاضر کے حسینی ہیں ۔

راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا : 61 ہجری کی کربلا کی معرفت نہ ہو تو دور حاضر کے کربلا کی شناخت و پہچان ممکن نہیں، اسی لئے یزید اور اس کے ہمنوا اسلام کا لبادہ اُوڑھ کر فرزند رسول و آل رسول صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کو قتل کرنے پر تیار ہوگئے تھے ۔

انہوں نے تاکید کرتے ہوئے کہا : آج بھی یزیدی فکر کے پیروکار مسلمانوں کی تکفیر،اور قتل و غارت گری کا بازار گرم کر کے اسلام کی حقیقی و اصلی تصویر کو مندمل کر دیا ہے، اور ان کی کوشش ہے کہ یزیدی فکر کے حامل نام نہاد اور جعلی اسلام کا پرچم دنیائے اسلام پر لہرائے۔ اس سال عزاداران عزاداری سید الشہداء پر مجالس و جلوس عزاء کا گزشتہ سالوں سے زیادہ منظم انعقاد کرائیں گے۔

حجت الاسلام اجہ ناصر عباس جعفری نے بیان کیا : دور حاضر کا یزید بے نقاب ہو چکا ہے، اس کے چہرے پر پڑا نقاب کھینچا جا چکا ہے، داعش ، طالبان اور النصرہ کے مکروہ چہرے بھی اب پہچانے جا چکے ہیں، اب ان کی طرف داروں اور سرپرستوں کی باری ہے ۔

انہوں نے اپنے پیغام میں واضح کیا : امام عالہ مقام علیہ السلام اور ان کے اصحاب باوفا کی عزاداری ہماری شہ رگ حیات اور عقیدت کا معاملہ ہے، یہ عشق و معرفت کی انتہا ہے، جس پر کسی قسم کا قدغن اور پابندی ہم قبول نہیں کریں گے، پاکستان کا آئین و قانون عزاداری کا محافظ ہے، ہم اس آئینی و قانونی حق سے دستبردار نہیں ہونگے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے بیان کیا : بلوچستان کے علاقے نصیر آباد بولان میں نہتے عزاداروں پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا : دشمن ہمیں موت سے ڈرا کر عزاداری کو محدود کرنے کی سازش میں ہیں۔

انہوں نے نے تاکید کرتے ہوئے کہا : خدا کی قسم شہادت ہماری میراث ہے، جسے ہماری ماوُں نے ہمیں دودھ میں پلایا ہے، ہم عزاداری کے لئے اپنی جان، مال، اولاد سب قربان کرنے کو ہمہ وقت تیار ہیں ، لیکن عزاداری سید شہداء سے ایک ایچ بھی پیچھے ہٹنے کو تیار نہیں، ہماری جانیں، آل و اولاد نواسہ رسول کی امانت ہے، ہم اسے اسی راہ میں قربان کرنے میں ذراسی بھی دیر نہ کریں گے،

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے وضاحت کی : ہمیں ملک بھر میں عزاداردوں کی سکیورٹی پر شدید تحفظات ہیں، ووفاقی و صوبائی حکومتیں بلخصوص پنجاب میں دہشت گردوں سے زیادہ عزاداروں کو ہراساں کرنے میں حکمران مصروف ہیں، پنجاب پولیس ملت جعفریہ کے گھروں کے چادر اور چادیواری کے تقدس پامال کرکے بدترین ریاستی دہشت گردی کر رہی ہے، اس عمل میں وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف براہ راست ملوث ہے۔

حجت الاسلام اجہ ناصر عباس جعفری نے بیان کیا : عزاداری وحدت و اخوت اور ظالم و جابر کے سامنے ڈٹ جانے کا پیغام دیتی ہے، سید شہداء کی ذات بابرکات کسی ایک فرقہ یا مذہب کی جاگیر نہیں، بلکہ نواسہ رسولﷺ حضرت امام حسین ابن علی علیہ السلام ہر دور کے مظلوموں کے پیشوا اور ہادی و رہنما ہیں، امام حسین علیہ السلام کی قربانی و قیام کا مقصد رہتی دنیا تک کے مظلوموں اور محروموں کو آزادی و حریت کیلئے آمادہ و تیار کرنا ہے، ہم سید شہداء کے راستے پر چل کر ہی ظالموں، جابروں اور آمروں سے آزادی حاصل کی جا سکتی ہے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬