15 May 2020 - 11:49
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 442734
فونت
ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں سی آر پی ایف کے ہاتھوں ایک کشمیری نوجوان کی ہونے والی موت کے بعد حالات سخت کشیدہ ہو گئے۔

رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق بڈگام کے علاقے کاؤسا بیروا نامی علاقے میں ہندوستان کی سیکورٹی فورس نے ایک کشمیری نوجوان عام شہری کو موت کے گھاٹ اتار دیا جس کے بعد صورت حال کشیدہ ہو گئی. سیکورٹی فورس نے حالات کو قابو میں کرنے کے لئے غیر اعلانیہ کرفیو نافذ کر دیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق علاقے میں انٹرنیٹ سروس بھی بند کر دی گئی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہندوستان کے سیکورٹی اہلکاروں نے اس کشمیری نوجوان کو اس وقت گولی ماری جب وہ سیکورٹی اہلکاروں کے کہنے پر اپنی گاڑی پارک کر رہا تھا، تاہم پولیس ترجمان نے دعوا کیا ہے کہ معراج الدین نامی اس کشمیری کو گاڑی روکنے کو کہا گیا تھا مگر جب اس نے اپنی گاڑی نہیں روکی تو سی آر پی ایف نے اس پر فائر کھول دیا۔

بتایا جاتا ہے کہ اس واقعے کے بارے میں تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔ جاں بحق ہونے والے کشمیری نوجوان کا باپ، پولیس محکمے میں ہی سب انسپیکٹر بتایا جاتا ہے۔

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬
تازه ترین خبریں
مقبول خبریں
پسندیده خبریں