‫‫کیٹیگری‬ :
10 May 2015 - 23:42
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 8123
فونت
مجلس وحدت مسلمین پاکستان :
رسا نیوز ایجنسی ـ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے گلگت بلتستان کے انتخابات کے سلسلے میں اسکردو حلقہ 3 کا دورہ کیا، اس موقع پر مختلف مقامات پر عوامی اجتماعات بھی منعقد ہوئے۔
مجلس وحدت مسلمين پاکستان


رسا نیوز ایجنسی کے رپورٹر کی رپورٹ کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ حجت الاسلام ناصر عباس جعفری نے گلگت بلتستان کے انتخابات کے سلسلے میں اسکردو حلقہ 3 کا دورہ کیا، اس موقع پر مختلف مقامات پر عوامی اجتماعات بھی منعقد ہوئے۔

انہوں نے اپنے دورہ کے موقع پر گول اور مہدی آباد میں عظیم الشان عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے اپنے خطاب میں کہا : گلگت بلتستان کے انتخابات میں ایم ڈبلیو ایم بھرپور کامیابی حاصل کرے گی، کیونکہ یہ جماعت محروموں اور مظلوموں کی جماعت ہے، گلگت بلتستان کے محروم و مظلوم طبقے کے حوصلے سب سے بلند ہیں اور ظالم حکمرانوں سے انتقام لینے کے لئے آمادہ ہیں۔

ناصر عباس جعفری نے کہا : مجلس وحدت مسلمین ہر حال میں مظلوموں کے ساتھ کھڑی ہوگی اور ظالموں کی مخالفت کرتی رہے گی۔ اس جماعت نے پاکستان میں فرقہ واریت کو دفن کرنے اور وحدت کی فضا قائم کرنے کے لئے عملی اقدامات اٹھائے اور اسی جماعت نے پاکستان دشمن عناصر بالخصوص دہشتگردوں کے خلاف ملک بھر میں آواز بلند کی اور انکے حق میں بولنے والے اور پشت پناہی کرنے والی جماعتوں کو بے نقاب کرکے رکھ دیا۔

انہوں نے وضاحت کی : پاکستان میں موجود چند سیاسی جماعتیں بالخصوص پاکستان مسلم لیگ (ن) دہشتگرد جماعتوں کے سیاسی ونگ کا کردار ادا کرتی رہی ہے اور مذاکرات کے نام پر انکو پھلنے پھولنے کا موقع ملا۔ دہشتگردوں اور ملک دشمن عناصر کی جگہ تختہ دار ہے نہ کہ مذاکرات کی میز۔ ملک میں ظالموں نے عوام کو فرقہ واریت میں تقسیم کر دیا اور غریب عوام پر حکمرانی کرتے رہے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے کہا : گلگت بلتستان میں بھی ملک دشمن عناصر نے لسانیت، علاقائیت اور فرقہ واریت کے ذریعے عوام کو ٹکڑوں میں تقسیم کر دیا اور غریب عوام کو اپنے حقوق سے نابلد کر دیا۔ ظالم حکمرانوں کی یہ خواہش ہوتی ہے کہ عوام تقسیم رہیں اور یہ لوگ قومی وسائل لوٹتے رہیں۔

انہوں نے تاکید کی : اب گلگت بلتستان کے عوام ہوشیار ہوگئے ہیں، اب یہ عوام تقسیم ہونے والے نہیں، عوام کو ہوشیاری کا مظاہرہ کرنا ہوگا، اگر گلگت بلتستان میں شیعہ، سنی، اسماعیلی اور نوربخشیہ اکٹھے ہو جائیں تو ظالم حکمرانوں کو گھر بھیجا جاسکتا ہے، ظالموں اور غاصبوں کا راستہ روکا جاسکتا ہے اور عوامی حقوق میسر آسکتے ہیں۔
مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ نے بیان کیا : گلگت بلتستان تبدیلی کی جگہ ہے، یہاں کی حیثیت پاکستان میں ایسی ہی ہے جیسے جسم میں سر کی۔ اگر گلگت بلتستان مضبوط ہوجائے تو پورا ملک مضبوط ہوسکتا ہے۔ گلگت بلتستان کے دریاوں سے پورے ملک میں موجود بجلی بحران پر قابو پایا جاسکتا ہے، یہاں کی سیاحت سے ملک کی معیشت میں بہتری آسکتی ہے۔

انہوں نے وضاحت کی : ہر بار وفاقی جماعتوں نے زبانی دعووں اور طاقت کے استعمال سے گلگت بلتستان کے عوام کو گمراہ کیا اور یہاں حکومت بنانے کے بعد اس خطے کے وسائل کو لوٹنے کے علاوہ کچھ بھی نہیں کیا۔ گلگت بلتستان کی 67 سالہ محرومیوں کی ذمہ دار وفاقی سیاسی جماعتیں ہیں، جنہوں نے اس خطے کے عوام کو حقوق دینے کے لئے اقدامات اٹھانے کی بجائے یہاں کی آواز کو دباتے رہے، اب گلگت بلتستان کے محروموں کی آواز کو دبایا نہیں جاسکتا۔

حجت الاسلام ناصر عباس جعفری نے کہا : اگر گلگت بلتستان کے عوام اپنے حقوق کے لئے دس دن سڑکوں پر نکل آئے تو حکمران حقوق دینے پر مجبور ہونگے، ہم وعدہ کرتے ہیں کہ گلگت بلتستان کے عوام اپنے حقوق کے لئے سڑکوں پر آئیں تو ہم پورے پاکستان سڑکوں پر نکل آئیں گے اور پورے ملک کو جام کر دیں گے، اسکے ساتھ پوری دنیا میں آواز بلند کریں گے اور حقوق دینے پر مجبور کریں گے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬