18 January 2015 - 23:10
‫نیوز‬ ‫کوڈ‬: 7699
فونت
جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن طالبات پاکستان :
رسا نیوز ایجنسی ـ جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن طالبات پاکستان کے مرکزی سرپرست کی زیر صدارت اجلاس کا انعقاد کیا گیا ۔
جعفريہ اسٹوڈنٹس آرگنائزيشن پاکستان بے حیائی کے سد باب کے لئے ایک ہفتہ کی  مہم چلائی جائے گی


رسا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق جعفریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن طالبات  پاکستان کے مرکزی سرپرست سیدہ سدرہ نقوی  کی زیر صدارت اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس میں اہم فیصلے لی گئی، جس میں حجاب مہم آگاہی کے نام 9 فروری سے 15 فروری تک حجاب مہم منانے کا فیصلہ کیا گیا۔

ترجمان جعفریہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن طالبات پاکستان کے مطابق اجلاس کی کاروائی تلاوت کلام پاک اور نعت رسول مقبول (ص) سے کی گئی ،اجلاس میں ڈویژنل آرگنائزنگ کمیٹی نے شرکت کی ان ممبران پر مشتمل ہے خواہر شجیعہ زہرا علوی ، خواہر سعدیہ بتول ، خواہر مبشرہ بتول ، خواہر ثمرین فاطمہ ، خواہر عاصمہ بخاری اور خواہر طلعت بتول۔

اجلاس میں  کارکردگی رپورٹ ،دستور ، بجٹ ، دورہ جات کے مسائل اور حل ،تربیتی شعبہ کا آغاز ،اسکائوٹ کمیٹی کی تشکیل پہ بحث ہوئی ،اراکین نے اپنی آراء پیش کیںجس پر مرکزی سرپرست جے ایس او طالبات پاکستان نے غور و فکر  کے بعد قائد ملت جعفریہ پاکستان  تک ان تجاویز کو پہنچانے اور ان پر عملدرآمد کی یقین دہانی کروائی۔

ترجمان جے ایس او پاکستان نے بیان کیا : اجلاس میں اراکین کی باہمی مشاورت سے یہ فیصلہ لیا گیا ہے کہ ملک میں پھیلتی ہوئی بے شرمی و بے حیائی خاص طور پہ ویلنٹائن ڈے کے نام پرپھیلائی جانے والی بے حیائی کے سد باب کے لئے ایک ہفتہ کی  مہم چلائی جائے گی جسے حجاب آگاہی مہم کا نام دیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا : یہ مہم ہر سال منائی جائے گی جس میں پورا ہفتہ مومنات میں حجاب کے حوالے سے لٹریچر تقسیم کیا جائے گا اور ملک بھر میں اس مہم کو فروغ دیا جائے گا، یہ مہم جے ایس او طالبات کی کاوشوں میں سے ایک اہم کاوش ہو گی جیسا کہ جے ایس او طالبات  پاکستان کا منشور ہے کہ اسلامی تعلیمات کی روشنی میں طالبات کی زندگیوں کو سنوار جائے لہذا اس مہم کے ذریعے طالبات میں پردے کی اہمیت و افادیت اجاگر کی جائے گی جسکا مقصد شرم و حیا کی پاسداری ہے۔
 

تبصرہ بھیجیں
نام:
ایمیل:
* ‫نظریہ‬:
‫برای‬ مہربانی اپنے تبصرے میں اردو میں لکھیں.
‫‫قوانین‬ ‫ملک‬ ‫و‬ ‫مذھب‬ ‫کے‬ ‫خالف‬ ‫اور‬ ‫قوم‬ ‫و‬ ‫اشخاص‬ ‫کی‬ ‫توہین‬ ‫پر‬ ‫مشتمل‬ ‫تبصرے‬ ‫نشر‬ ‫نہیں‬ ‫ہوں‬ ‫گے‬